وارسا میں اینٹی ایران کانفرنس علاقائی سلامتی کیخلاف ہے: روسی مندوب

نیو یارک، 23 جنوری، ارنا - اقوام متحدہ میں تعینات روس کے مستقل مندوب نے کہا ہے کہ وارسا کانفرنس ایک ایران مخالف اجلاس ہے جس سے علاقائی امن و سلامتی پر منفی اثرات مرتب ہوں گے.

'وسیلی نیبینزیا' نے ارنا نیوز کے نمائندے سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے مزید بتایا کہ روس وارسا کانفرس میں شریک نہیں ہوگا اور اس حوالے سے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں بھی بات کی گئی ہے.
انہوں نے بتایا کہ اس اجلاس کے اصل مقاصد واضح ہیں، ہم نے بعض سفارتکاروں سے یہ بھی سنا ہے کہ وہ اس اجلاس میں شرکت کرنے پر مجبور ہیں.
روسی مندوب نے یہ استفسار کیا کہ کیوں وارسا کانفرنس میں صرف ایک مخصوص ملک کو مدعو نہیں کیا گیا؟ ایران خطے کا ایک اہم اور بڑا ملک ہے جبکہ وارسا کانفرنس کے مقاصد جانبدار لگتے ہیں.
انہوں نے مزید بتایا کہ خطے کے امن و سلامتی کا قیام مسئلہ فلسطین کے حل کے بغیر ناممکن ہے لہذا علاقائی ممالک اسے اپنی پالیسی میں ترجیح دیں.
وسیلی نیبینزیا نے کہا کہ ہم سمجھتے ہیں کہ امن و سلامتی کے لئے چندفریقی تعاون اور عالمی کوششیں ناگزیر ہیں.
یاد رہے کہ امریکہ مشرق وسطی میں امن و سلامتی کے نام نہاد موضوع پر ایران کے معاملے پر ایک بین الاقوامی کانفرنس کی میزبانی کرنے کا منصوبہ بنا رہا ہے. امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو کے مطابق یہ کانفرنس آئندہ ماہ 13 فروری کو پولینڈ میں کرائی جائے گی.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@