ایران میں سوئس سفیر کی طلبی، خاتون ایرانی صحافی کی گرفتاری پر احتجاج

تہران، 22 جنوری، ارنا- امریکہ میں خاتون ایرانی صحافی "مرضیہ ہاشمی" کی بلاجواز گرفتاری کے رد عمل میں اسلامی جمہوریہ ایران نے تہران میں تعینات سوئٹزرلینڈ کے سفیر جن کا ملک امریکی مفادات کے تحفظ کا ذمہ دار ہے کو طلب کرکے اس اقدام پر شدید احتجاج کیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ "بہرام قاسمی" نے کہا کہ امریکہ میں ایران کے انگریزی نیوز چینل پریس ٹی وی کی خاتون صحافی کی گرفتاری کو طول ملنے کی وجہ سے منگل کے روز امریکی مفادات کے محافظ کی حیثیت سے سوئس سفیر کو دفتر خارجہ طلب کرکے ن سے مرضیہ ہاشمی کی غیرقانونی گرفتاری پر شدید احتجاج کیا گیا.۔
قاسمی نے مزید کہا کہ اس موقع پر ایران نے سوئس سفیر کو ایک احتجاجی مراسلہ سونپا جس میں امریکہ میں خاتون صحافی کی گرفتاری اور ان کے ساتھ توہین آمیز رویے اپنانے پر شدید احتجاج کیا گیا اور ان کی بغیر کسی شرط کے جلد آزادی کا مطالبہ کیا۔
اس کے علاوہ، اس ملاقات میں اس بات پر زور دیا گیا کہ ایرانی خاتون صحافی کے ساتھ ایف بی آی اہلکاروں کے غیر انسانی سلوک پر امریکی حکام کی خاموشی در اصل امریکہ کی بین الاقوامی ذمہ داریوں اور انسانی حقوق کے اصولوں کی کھلی خلاف ورزی ہے۔
اس موقع پر سوئٹزرلینڈ کے سفیر نے کہا کہ وہ اسلامی جمہوریہ ایران کے مطالبات کو فوری طور امریکی حکام تک پہنچادیں گے اور ایرانی حکومت کو اس کے نتیجے سے آگاہ کریں گے۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@