ایران میں بانی پاکستان "قائد اعظم" کی یاد میں شاندار تقریب کا انعقاد

مشہد، 22 جنوری، ارنا- ایرانی شہر مشہد کی "فردوسی" یونیورسٹی میں بانی پاکستان قائد اعظم "محمد علی جناح" کی یوم پیدائش کی مناسبت سے ایک شاندار تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں ایران میں تعینات خاتون پاکستانی سفیر بھی شریک تھیں۔

اس تقریب میں پاکستانی سفیر "رفعت مسعود" نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بانی پاکستان محمد علی جناح نے اسلامی اصولوں کی بنیاد پر ایک اسلامی ملک کا سنگ بنیاد رکھا۔
انہوں نے کہا کہ قائداعظم محمد علی جناح ایک راسخ العقیدہ مسلمان تھے اور آپ نے قرآن و سنت کے مطابق ایک اسلامی فلاحی مملکت کے قیام کا منصوبہ پیش کیا۔
انہوں نے مزید کہا کہ محمد علی جناح، علامہ اقبال لاہوری کے نظریات کے مطابق اسلام اور جدیدیت کو ایک دوسرے کے ساتھ چاہتے تھے۔
رفعت مسعود نے کہا کہ اسی نقطہ نظر کی روشنی میں بھارت سے الگ ہونے کے بعد پاکستان میں تعلیم کی اہمیت اجا گر دیا گیا۔
رفعت مسعود نے کہا کہ جب قائد اعظم نے حصول تعلیم کیلئے برطانیہ میں قیام پذیر تھے، ہندوستان میں انگریز سامراج کے خلاف بڑی جد و جہد کی حتی کہ آپ، سنہ 1937 عیسوی تک بھی نہیں چاہتے تھے کہ مسلمان لوگ، ہندوعوام اور ہندوستان سے الگ ہوئے۔
انہوں نے کہا کہ جب محمد علی جناح لندن سے ہندوستان واپس آئے، آل انڈیا کانگرس کے رکن تھے اور ان کا خیال تھا کہ مسلمانوں کیلئے ہندوستان میں ایک خاص جگہ ہونا چاہیے لیکن زمانے گزرنے کے ساتھ ساتھ انھیں یہ محسوس ہوا کہ ہندوستانی مسلمانوں کو بہت خراب صورتحال کا سامنا ہے۔
در اصل قائد اعظم محمد علی جناح نے نہ صرف مسلمانوں کو آزادی اور وقار کے ساتھ زندگی گزارنے کیلئے علیحدہ مملکت کا تصور دیا بلکہ آپ نے پورے ہندوستان میں مسلمانوں میں آزادی کی امنگ پیدا کرنے کے لئے جو نعرہ دیا وہ اسلام اور مسلمانوں سے گہری محبت اور وابستگی کا مظہر ہے.
یاد رہے کہ 1940ء میں قائداعظم محمد علی جناح نے اپنے آپ کو برصغیر کے 10کروڑ مسلمانوں کا واحد قومی راہنما تسلیم کرایا اور آپ کی قیادت میں14اگست1947ء کو مسلمانوں کی سب سے بڑی اور عظیم مملکت اسلامی جمہوریہ پاکستان کا قیام عمل میں لایا گیا۔
واضح رہے کہ ایرانی عوام، بانی پاکستان کو بخوبی جانتے ہیں اور انھیں بھر پور خراج عقیدت پیش کرتے ہیں اس کے علاوہ ایرانی دارلحکومت تہران کی ایک بہت بڑی شاہراہ بھی محمد علی جناح کے نام سے منسوب ہے۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@