پمپئو کو ایران عراق تعلقات میں مداخلت کا کوئی حق نہیں: ظریف

نجف، 17 جنوری، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ امریکی حکمران بالخصوص مائیک پمپئو کو اسلامی جمہوریہ ایران اور عراق کے درمیان تعلقات میں مداخلت کا کوئی حق نہیں ہے.

ان خیالات کا اظہار ''محمد جواد ظریف'' نے عراق کے مذہبی شہر 'نجف اشرف' میں ایران اور نجف صوبے کے مشترکہ اقتصادی فورم میں شرکت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران کے عراق سے تعلقات بعض ملکوں کی طرح برائے نام نہیں، ہمارے تعلقات امریکہ کے معرض وجود میں آنے سے پہلے تھے اور مستقبل میں بھی قائم رہیں گے.
ظریف نے کہا کہ عراق کے ساتھ ہمارے تعلقات زبانی کلامی نہیں، ہم ایک دوسرے کے بھائی ہیں، حالیہ دورہ عراق کسی بھی ملک کا میرا سب سے طویل دورہ رہا اور یہ اس بات کا ثبوت ہے کہ دونوں ممالک کے عوام کے درمیان غیرمعمولی تعلقات قائم ہیں.
انہوں نے مزید کہا کہ عراق کے پانچ روزہ دورے کے موقع پر اعلی قیادت کے ساتھ ملاقاتیں کیں جبکہ بغداد، اربیل، سلیمانیہ، کربلا اور نجف بھی گئے اور اس دوران سیاسی اور تجارتی حکام سے تعمیری مذاکرات طے پائے.
ایرانی وزیر خارجہ اس بات پر اطمینان کا اظہار کیا کہ ایران عراق تعلقات کا مستقبل روشن ہے.
انہوں نے دونوں ممالک کے درمیان جوہری شعبے میں تعاون پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ایران عالمی قوانین کے دائرے میں رہتے ہوئے عراق کے ساتھ تعاون پر آمادہ ہے.
محمد جواد ظریف نے مزید کہا کہ ایران عراق کے ساتھ ویزے قوانین کی منسوخی، ٹیرف میں کمی اور مشترکہ سرحدی علاقوں میں فری اکنامک زون کے قیام کے لئے آمادہ ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@