عراقی کُرد حکام ایران کیساتھ اقتصادی تعاون کو بڑھانے کے خواہاں

اربیل، 15 جنوری، ارنا - عراقی علاقے کردستان کے سیاسی اور تجارتی حکام نے اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ دوطرفہ اقتصادی تعاون کو بڑھانے پر زور دیا ہے.

ایرانی وزیر خارجہ کے دورہ عراقی کردستان کے موقع پر کردستان کے ایوان صنعت و تجارت کے سربراہ نے ایران کے ساتھ تجارتی اور اقتصادی شعبوں میں دوطرفہ تعاون کو مزید بڑھانے پر زور دیا.
انہوں ںے ایران اور عراقی کردستان کے مشترکہ تجارتی فورم کے اجلاس موقع پر پریس کانفرس کرتے ہوئے مزید کہا کہ اس وقت ایران اور کردستان کے مشترکہ تجارتی حجم 6 ارب ڈالر ہے تاہم دوطرفہ اقتصادی سرگرمیوں کو مزید بڑھانے کے لئے عراقی کردستان میں سرگرم تجارتی کمپنیوں کے مسائل کا حل ناگزیر ہے.
''دارا جلیل خیاط'' نے اس امید کا اظہار کیا کہ ایران اور عراقی کردستان کے اقتصادی تعلقات کو مزید فروغ ملے گا جس کی مدد سے تعلقات کو بڑھانے کی راہ میں موجود رکاوٹوں کا بھی خاتمہ ہوگا.
انہوں نے عراقی کردستان میں موجود ایرانی کمپنیوں کو درپیش مسائل سے متعلق کہا کہ عراقی کردستان کے وزیراعظم کے خصوصی احکامات کے مطابق ایک کمیٹی تشکیل دی گئی ہے جس کا مقصد ایرانی کمپنیوں کو درپیش مسائل کا ازالہ کرنا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ دوطرفہ تجارت کو بڑھانے کے مقصد سے دونوں ممالک کے درمیان نئے سرحدی گیٹ کے قیام پر غور کیا جارہا ہے.
دریں اثناء عراقی کردستان کے حکومتی ترجمان ''صفین دیزایی'' نے تجارتی فورم کے موقع پر ارنا نیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایرانی وزیر خارجہ کے دورے کو بڑی اہمیت حاصل ہے اور ہم سمجھتے ہیں کہ اس دورے کی مدد سے مستقبل میں ایران اور عراقی کردستان کے سیاسی اور اقتصادی تعلقات میں غیرمعمولی اضافہ ہوگا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@