صہیونی پالیسیوں کی پیروی، عربی ممالک کے مفاد میں نہیں ہے: ایرانی عیسائی رہنما

تہران، 19 جولائی، ارنا – ایران کے عیسائی رہنما نے کہا ہے کہ بعض ممالک کی صہیونی پالیسیوں سے پیروی ان ممالک کے مفاد میں نہ ہوگی.

یہ بات سیامک مرہ صدق نے تہران میں ایران فوبیا کے فروغ کیلئے صہیونی پالیسیوں کے عنوان سے ایک کانفرنس کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ اسرائیل اور بعض عرب ممالک خطے میں ایران فوبیا کو ہوا دینے کے ذریعے اپنی طاقت اور پوزیشن کا تحفظ اور اندرونی مسائل کا حل چاہتے ہیں.
سیامک مرہ صدق نے بتایا کہ کچھ عرب ممالک ایران فوبیا کے پھیلاو کے مقصد سے شیعہ اور سنی کے درمیان معمولی اختلافات کا استعمال کر رہے ہیں تو ہم کو اس حوالے سے ہوشیار رہنا ہوگا.
انہوں نے بتایا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات جیسے عربی ممالک خفیہ طور پر اسرائیل کے ساتھ رابطے میں ہیں.
مرہ صدق نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ سعودی عرب کے ساتھ اسرائیل اور امریکہ کا اتحاد طویل المدت نہ ہوگا کیونکہ ریاض، واشنگٹن اور تل ابیت سے اپنے امن و سلامتی کو فراہم کرنے کا مطالبہ کیا ہے جبکہ سعودی عرب کے ساتھ تعلقات امریکہ اور ناجائز صہیونی ریاست کا مقصد، اس ملک کے مالی وسائل کا استعمال کرنا اور اپنے مفادات کو پورا کرنا ہے.
9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@