تہران کی پولینڈ کیجانب سے ایران مخالف اجلاس کی میزبانی پر کڑی تنقید

تہران، 12 جنوری، ارنا – ایرانی وزیر خارجہ نے پولینڈ کے دارالحکومت وارساو کی میزبانی میں منعقد ہونے والے امریکہ کے ایران مخالف اجلاس پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولش حکومت کے یہ اقدام باعث ذلت ہے.

یہ بات "محمد جواد ظریف" نے جمعہ کے روز اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ میں پولش حکومت کی جانب سے منعقد ہونے والے امریکہ کے ایران مخالف اجلاس کی میزبانی پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران نے دوسر ی عالمی جنگ میں پولینڈ کی حمایت کی تھی مھر اب پولینڈ امریکی ایما پر ایران مخالف مضحکہ خیز اجلاس کی میزبانی کرنے لگا ہے.
ظریف نے کہا کہ ہم اس اجلاس کے شرکاء کو کہتے ہیں کہ ایران مخالف دوسری مضحکہ خیز نمائشوں کے شرکاء یا اب مرچکے ہیں یا ذلیل یا تنہائی کا شکار ہیں مگر اسلامی جمہوریہ ایران گزشتہ کی طرح طاقتور ہے.
تفصیلات کے مطابق، امریکی وزیر خارجہ نے جمعہ کے روز اعلان کردیا کہ پولینڈ کے دارالحکومت کی میزبانی میں 13 اور 14 فروری ایران مخالف اجلاس کا انعقاد کیا جائے گا جس میں ایشیائی، افریقی، مغربی، یورپی اور مشرق وسطی کے ممالک شریک ہوں گے.
9393*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@