ٹرمپ انتظامیہ کی انتہاپسندی سے امریکیوں کو کچھ حاصل نہیں ہوگا: ایران

تہران، 11 جنوری، ارنا - ترجمان ایرانی دفترخارجہ نے امریکی وزیرخارجہ کے حالیہ الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی حکومت بالخصوص موجودہ انتہاپسند انتظامیہ نے جو راستہ اختیار کیا ہے اس سے امریکہ کو کچھ نہیں ملے گا.

'بہرام قاسمی' نے جمعہ کے روز اپنے ایک بیان میں مائیک پمپئو کی جانب سے دورہ مصر کے موقع پر ایران کے خلاف لگائے گئے بے بنیاد الزامات کے ردعمل کا اظہار کیا-
انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ کی موجودہ انتہاپسند انتظامیہ نے ایران دشمن پالیسی اور سابق حکومت کے فیصلوں کو نظرانداز کرتے ہوئے ایک ایسا راستہ اپنایا ہے جس سے امریکہ کو کچھ حاصل نہیں ہوگا۔
ترجمان نے بتایا کہ ٹرمپ کی جابر انتظامیہ ایک ایسے جامع اور عالمی معاہدے سے الگ ہوئی جو طویل مذاکرات سے حاصل ہوا تھا اب یہ انتہاپسند انتظامیہ جب جوہری معاہدے کا نعم البدل نہیں لاسکتی تو مایوسی کا شکار ہوئی ہے۔
بہرام قاسمی نے مزید کہا کہ ایران نے ہمیشہ ثابت کیا ہے کہ وہ پرامن بقا اور تعاون کے حق میں مگر امریکہ تو ایک طرف سے ایران کے خلاف دشمنی میں اضافہ کررہا ہے اور دوسری طرف خود کو مذاکرات کا نام نہاد حمایتی ظاہر کرتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ پمپئو جان لیں کہ ہم ایران اور ایرانیوں کے حقوق کا دفاع اور قومی مفادات کو ہر صورت میں تحفظ فراہم کرتے رہیں گے۔
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی ترجمان نے امریکی وزیرخارجہ کے ان دعووں کا جواب دیا جو مائیک پمپئو نے دورہ مصر کے موقع پر قاہرہ کی یونیورسٹی میں خطاب کرتے ہوئے کیا تھا۔
پمپئو نے اس موقع پر ایران مخالف امریکی الزامات کو دہراتے ہوئے یہ دعویٰ کیا تھا کہ ایران سے مذاکرات کے لئے امریکی شرائط میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے۔
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@