ظریف کا امریکی وزیرخارجہ کے دعوے پر ردعمل

تہران، 11 جنوری، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے امریکی ہم منصب کی جانب سے دورہ مصر کے موقع پر کئے جانے والے دعووں پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ جس مسئلے پر ہاتھ ڈالے وہاں افراتفری اور جبر کی فضا پیدا ہوتی ہے.

''محمد جواد ظریف'' نے اپنے ٹوئٹر اکاونٹ میں لکھا ہے کہ امریکہ جہاں بھی مداخلت کرتا ہے تو اس کے نتیجے میں سوائے افراتفری، ظلم اور عدم اطمینان کچھ حاصل نہیں ہوتا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایسا دن کبھی نہیں آئے گا کہ ایران امریکی نقش قدم پر چلے اور مائیک پمپئو کے انسانی حقوق کے حوالے سے طرز عمل پر چلے اور جس کی وجہ سے ایران کو دنیا میں معمولی حیثیت ملے.
ظریف نے مائیک پمپئو کو مشورہ دیا کہ یہی بہتر ہے کہ امریکہ ایران کا پیچھا چھوڑ دے.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے امریکی ہم منصب کے ان دعووں کا جواب دیا جو مائیک پمپئو نے دورہ مصر کے موقع پر قاہرہ کی یونیورسٹی میں خطاب کرتے ہوئے کیا تھا.
پمپئو نے اس موقع پر ایران مخالف امریکی الزامات کو دہراتے ہوئے یہ دعویٰ کیا تھا کہ ایران سے مذاکرات کے لئے امریکی شرائط میں کوئی تبدیلی نہیں آئی ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@