علاقائی سلامتی کیلئے امریکہ نہیں، ایران اور پاکستان کی افواج ہی کافی ہیں

بندرعباس،7 جنوری، ارنا - ایران کے جنوبی صوبے ہرمزگان میں سپریم لیڈر کے نمائندہ نے کہا ہے کہ خطی سلامتی کے لئے امریکہ کی کوئی ضرورت نہیں بلکہ اسلامی جمہوریہ ایران اور پاکستان کی طاقتور افواج اس مقصد کے لئے کافی ہیں.

یہ بات آیت اللہ غلامعلی نعیم آبادی نے گزشتہ روز بندرعباس کے دورے پر آئے ہوئے پاکستانی بحریہ کے افسروں کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور پاکستان کی مسلح افواج خطے کو سلامتی کی فراہمی کے لئے بھرپور صلاحیت رکھتی ہیں.
انہوں نے پاکستان اور ایران کے درمیان مذہبی، ثقافتی مشترکات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہ مشترکات دونوں ممالک کو قریب لانے کے باعث بنیں گے.
آیت اللہ نعیم آبادی نے مزید بتایا کہ ہم اسلام کے فرزند ہیں اور حضرت محمد (ص) کے نام کو زندہ رکھنے کی تلاش کر رہے ہیں.
پاک بحریہ کے مشن کمانڈر کموڈور محمد سلیم نے بتایا کہ ہم دونوں ممالک کے درمیان باہمی قریبی تعلقات پر بہت خوش ہیں اور ان تعلقات بڑھانے کے خواہاں ہیں.
محمد سلیم نے کہا کہ بندرعباس میں ہمارے جہازوں کی موجودگی ایران میں اپنی دوستی اور محبت کو ثابت کرنے کے لیے ہے.
پاکستانی عہدیدار نے ہم کشمیر کے مسئلے کے حل کے لیے ایرانی قائد انقلاب کی ہدایات اور حمایتوں کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں.
تفصیلات کے مطابق، پاکستانی بحریہ کے جہاز جذبہ خیرسگالی کے تحت، 4 روزہ دورے پر اسلامی جمہوریہ ایران کی جنوبی بندرگاہ بندرعباس پہنچ گئے.
پاکستان سے آنے والے جہازوں میں "خیبر" فلگ شپ ڈسٹرائر، "ژوپ" کوسٹ گارڈ، "مددگر" لاجسٹک شپ اور "راہنورد" ٹریننگ شپ شامل ہیں۔
یاد رہے کہ گزشتہ سال پاکستانی نیوے کے دو بحری جہاز بندرعباس بندرگاہ پر پہنچ گیا.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی بحریہ کے 57ویں فلوٹیلا کا تین جہازوں پر مشتمل بیڑہ 10 اکتوبر کو امن و دوستی کا پیغام لئے پاکستانی بندرگاہ 'کراچی' پہنچ گیا.
9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@