امریکہ نے ایران سے مذاکرات کیلئے پیغام دیا: ایڈمیرل شمخانی

تہران، 7 جنوری، ارنا - اعلی ایرانی سیکورٹی عہدیدار نے اس بات کا انکشاف کیا ہے کہ امریکہ نے انھیں افغانستان کے حالیہ دورے کے موقع پر دو مرتبہ اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ مذاکرات کرنے کا پیغام بھیجوایا.

ایڈمیرل ''علی شمخانی'' نے ارنا نیوز کے نمائندے کے سوال کا جواب دیتے ہوئے مزید کہا کہ امریکہ نے ایک پیغام رساں کے ذریعے انھیں حالیہ دورہ افغانستان کے موقع پر ایران کے ساتھ مذاکرات پر دلچسپی کا اظہار کیا.
انہوں نے کہا کہ امریکہ جھوٹ بول رہا ہے کہ ایران نے اسے مذاکرات کے لئے پیغام دیا ہے.
انہوں نے مغربی ایشیا میں سلامتی سے متعلق عالمی کانفرنس کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ بعض علاقائی ممالک میں ایران عسکری مشاورت کے مقصد سے موجود ہے لہذا ان ممالک میں ہماری کوئی فوجی موجودگی نہیں.
ایڈمیرل شمخانی نے بتایا کہ یمن، شام اور عراق کے عوام نے مثالی مزاحمت کے ذریعے اپنے ملکوں کا دفاع کرہے ہیں.
انہوں نے کہا کہ آج مغربی دنیا مختلف مشکلات کا شکار ہے جیسا کہ فرانس کو 'پیلی جیکٹ' والوں کے مظاہروں کا سامنا رہا.
اعلی ایرانی سیکورٹی عہدیدار نے مزید بتایا کہ شام سے امریکی انخلاء نہ صرف ایک زبردستی انخلاء ہے بلکہ اس سے امریکہ کا تاریک مستقبل نظر آتا ہے.
انہوں نے کہا کہ آج امریکہ افغانستان سے نکلنے کی باتیں کررہا ہے جبکہ اس نے افغانستان میں سیکورٹی معاملات سے متعلق کسی ضرورت کو پورا نہیں کیا.
ایڈمیرل علی شمخانی نے کہا کہ امریکہ نے شام میں داعش کے خاتمے پر کوئی کردار ادا نہیں کیا بلکہ اس کی پالیسی شکست سے دوچار ہوئی.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@