اعلی ایرانی سفارتکار کی افغان صدر کو ایران اور طالبان کی حالیہ ملاقات پر بریفینگ

تہران، 5 جنوری، ارنا- ایران کے نائب وزیر خارجہ برائے سیاسی امور "عباس عراقچی" نے افغان صدر"اشرف غنی" کے ساتھ ملاقات میں انھیں، تہران میں طالبان اور ایرانی حکام کی حالیہ ملاقات پر بریفینگ دی۔

ہونے والی ملاقات میں دونوں فریقین نے افغان حکومت کی قیادت میں افغان امن عمل سمیت ایرانی بندرگاہ "چابہار" کی صلاحیتوں سے صحیح فائدہ اٹھانے کے بارے میں تبادلہ خیال کیا۔
اس موقع پر نائب ایرانی وزیر خارجہ نے طالبان کے ساتھ ایرانی حکام کی حالیہ ملاقات کے بارے افغان صدر کو بریفینگ دیتے ہوئے افغانستان میں افغانوں کی زیر سرکردگی جاری افغان امن عمل کیلئے ایران کی حمایت کا اعادہ کیا ہے۔
دونوں فریقین نے افغان امن عمل کے حوالے سے کامیاب نتیجے حاصل کرنے کیلئے مختلف شعبون میں مشترکہ تعاون پر زور دیا۔
تفصیلات کے مطابق عراقچی نے گزشتہ مہینے میں افغانستان کا دورہ کرتے ہوئے اس ملک کی اعلی قیادتیں کے ساتھ ملاقات اور گفتگو کی تھی۔
افغان نیوز ایجنسی "آوا" کے مطابق، نائب ایرانی وزیر خارجہ نے اپنے حالیہ دورہ افغانستان میں دونوں ممالک کے درمیان جامع سٹرٹیجک تعاون کی دستاویزات کو حتمی شکل دینے اور ایرانی دارلحکومت تہران میں، طالبان کے نمائندوں کے ساتھ ایرانی حکام کی ملاقات کے حوالے سے، افغانستان کی اعلی حکام کے ساتھ ملاقات اور گفتگو کی۔
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری ایڈمیرل "علی شمخانی" گزشتہ ہفتے اپنے افغان ہم منصب کی دعوت پر کابل پہنچے جہاں انہوں نے پہلی بار یہ اعلان کیا کہ افغانستان میں قیام امن کی خاطر ایران اور طالبان کے درمیان مذاکرات جاری رہیں.
ایڈمیرل شمخانی کے دورہ افغانستان کے بعد افغان طالبان کے ایک وفد نے تہران کا دورہ کیا.
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@