پاکستانی اخبار کی حکومت کو ایران سے تعلقات بڑھانے کی تجویز

اسلام آباد، 5 جنوری، ارنا - پاکستان کے ایک مشہور انگریزی اخبار نے حکومت پر زور دیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے ساتھ تعلقات میں مزید مضبوطی لائے.

''پاکستان ٹو ڈے'' نے ہفتہ کے روز اپنے اداریہ میں کہا کہ ایران اور پاکستان کے درمیان نہ صرف مذہبی، ثقافتی اور تاریخی مشترکات ہیں بلکہ دونوں ممالک کے درمیان 900 سے زائد کلومیٹر طویل سرحد موجود ہے جس کا پُرامن رہنا دونوں کے مفاد میں ہے.
اخبار کا کہنا تھا کہ ایرانی وزیر خارجہ محمد جواد ظریف پہلے غیرملکی رہنما تھے جنہوں نے پاکستان کے نئے وزیراعظم سے ملاقات کے لئے اسلام آباد کا دورہ کیا.
ایران پاکستانی صوبے بلوچستان کے دور دراز علاقوں کو بجلی فراہم کرتا ہے. وزیراعظم عمران خان کو چاہئے کہ جلد سے جلد ایران اور قطر کا دورہ کریں.
اخبار نے مزید کہا کہ خلیج فارس کے علاقے میں ملکوں کے درمیان اختلافات کو مد نظر رکھتے ہوئے حکومت پاکستان غیرمعمولی سفارتکاری کے ذریعے آگے بڑھے.
اگر پاکستان خلیج فارس میں ایک دیانت دار ثالث کا کردار نہیں ادا کرسکتا تو کم سے کم جانبدار فریق نہ بنے. پاکستان کو چاہئے کہ خطی تنازعات میں پڑنے کے بجائے خلیج فارس کے تمام ممالک کے ساتھ اچھے تعقات میں اضافہ کرے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@