ایران پابندیاں، اٹلی امریکہ سے مزید استثنی لینے کیلئے کوشاں

روم، 5 جنوری، ارنا - اطالوی اخبار La Stampa نے کہا ہے کہ اٹلی اسلامی جمہوریہ ایران سے متعلق امریکی پابندیوں سے ملنے والی استثنی کی مہلت میں مزید اضافے کے لئے کوشاں ہے.

اخبار کے مطابق، اطالوی وزیر خارجہ ''اینزو ماؤ ویرو میلانسی'' امریکہ کے دو روزہ دورے پر ہیں جس کا مقصد ایران مخالف امریکی پابندیوں سے متعلق ٹرمپ انتظامیہ سے مزید استثنی حاصل کرنا ہے.
اطالوی اخبار کی رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ مغربی ایشیا میں ہونے والی تبدیلی اور جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے بعد اٹلی کو ایران سے تعلقات میں نظرثانی کے لئے کافی وقت درکار ہے لہذا اطالوی وزیر خارجہ دورہ امریکہ کے موقع پر ان ہم معاملات پر مذاکرات کریں گے.
لا ستمپا اخبار نے باخبر ذرائع کے حوالے سے کہا کہ مغربی ایشیا کی صورتحال تیزی سے بدل رہی ہے اور ایران سے متعلق اٹلی کو مزید وقت درکار ہے.
یاد رہے کہ ایران جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کے بعد امریکہ نے مختلف ممالک پر دباؤ ڈالنا شروع کیا کہ وہ ایران سے تیل خریداری کو بند کریں. ایران مخالف نئی پابندیوں کا کچھ حصہ گزشتہ 6 مئی کو لاگو ہوا جبکہ توانائی سے متعلق پابندیوں کا اطلاق گزشتہ سال 4 نومبر سے ہوا.
پابندیوں کی ناکامی کے بعد امریکہ نے ایران سے متعلق تیل پابندیوں پر اٹلی سمیت 8 ملکوں کو چھوٹ دی.
وائٹ ہاؤس کی جانب سے ایرانی تیل کی برآمدات کو روکنے کی تمام تر کوششوں کے باوجود امریکہ نے بعض ممالک کو چھوٹ دینے کا فیصلہ کیا جس کا مقصد عالمی منڈی میں تیل کی قیمتوں میں اضافے کو روکنا تھا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@