چابہار کو ایران کی سب سے بڑی بندرگاہ بنانا ہوگا: جہانگیری

زاہدان، 2 جنوری، ارنا - سنیئر نائب ایرانی صدر نے کہا ہے کہ مکران کے سواحل میں بہت سی قابلیتوں کے باوجود چابہار بندرگاہ کو ملک کی سب سے بڑی بندرگاہ بنانا ہوگا.

یہ بات اسحاق جہانگیری' نے منگل کے روز ایرانی صوبے سیستان و بلوچستان میں منعقدہ ایک مقامی نشست سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ ایران کی موجودہ حکومت مکران کے سواحل کی صلاحیتوں سے بھرپور فائدہ اٹھانے کی کوشش کر رہی ہے .
جھانگیری نے آبنائے ہرمز کے اسٹریٹجک کردار کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ اس آبنائے کی سلامتی کو یقینی بنانا ایران کا فرض ہے اور ہم ہرگز آبنائے ہرمز کو بد امن کرنے کی اجازت نہیں دیں گے.
ایرانی عہدیدار نے بتایا کہ ہم تجارت اور مصنوعات کی منتقلی کیلئے اس آبنائے کی سلامتی کو فراہم کریں گے
انہوں نے مزید بتایا کہ افغانستان اور وسطی ایشیا کے ممالک چابہار سے استعمال کر سکتے ہیں اور ان ممالک کے ساتھ باہمی تعاون کی کو‏ئی حد مقرر نہیں ہے.
جھانگیری نے کہا کہ بھارت اور چین چابہار بندرگاہ کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کر سکتے ہیں.
سنیئر نائب ایرانی صدر نے بتایا کہ پاکستان اور افغانستان کے ساتھ صوبے سیستان اور بلوچستان کے پڑوسی ہونے کے باوجود یہ صوبہ ان ممالک کو برآمدات کے لیے بہت مواقع کے حامل ہے
9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@