سال 2019 میں ایران کیلئے مخصوص مالیاتی نظام پر کام جاری رہے گا: خاتون یورپی رہنما

تہران، 2 جنوری، ارنا - یورپی یونین کی چیف خارجہ پالیسی نے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ نئے سال 2019 میں یورپ کی جانب سے ایران کے لئے مخصوص مالیاتی میکنزم (SPV) کے نفاذ پر کام جاری رہے گا.

''فیڈریکا مغرینی'' نے اپنے ایک مضمون میں سال 2019 میں یورپی یونین کے 12 اہم امور پر روشنی ڈالی جن پر کام کیا جائے گا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران جوہری معاہدے کے تحفظ کے لئے یورپی کوشش سال 2018 کا سب سے اہم مسئلہ تھا اور یہ سلسلہ نئے سال میں جاری رہے گا.
مغرینی نے ایران جوہری معاہدے سے امریکی علیحدگی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ امریکی فیصلے کے چند منٹوں بعد انہوں نے معاہدے پر دستخط کرنے والے ممالک کی نمائندگی کرتے ہوئے یہ اعلان کردیا تھا کہ عالمی برادری اس معاہدے کو برقرار رکھنے اور اس کے مکمل نفاذ کی خواہاں ہے.
خاتون یورپی رہنما نے مزید کہا کہ ایران کے ساتھ جوہری معاہدہ طے پائے اڑھائی سال بیت گئے اور یہ اب بھی موثر انداز میں چل رہا ہے جس کا مقصد ایران کی پُرامن جوہری سرگرمیوں کو یقینی بنانا ہے.
انہوں نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے موقع پر ایران اور 4+1 ممالک کے درمیان ہونے والی نشست کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ یورپی ممالک ایران کے ساتھ مالیاتی لین دین برقرار رکھنے کے لئے ایک مخصوص نظام پر کام کررہے ہیں اور نئے سال میں بھی اس میکنزم کے اجرا کے لئے کام جاری رہے گا.
ڈونلڈ ٹرمپ جو جنوری 2017 میں بطور امریکی صدر اقتدار میں آئے تھے، نے گزشتہ 8 مئی کو غیرقانونی طور پر ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی کا اعلان کردیا اور اس کے علاوہ ایران پر پرانی پابندیاں عائد کرنے کا بھی حکم جاری کردیا.
امریکی صدر نے ایران کو تنہائی کا شکار کرنے کے لئے اقتصادی دباؤ اور پابندیاں کا طریقہ کار اپنایا ہوا ہے جبکہ ایران نے اپنے وعدوں پر عمل کیا اور عالمی جوہری ادارہ بھی اس بات کی بارہا تصدیق کرچکا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@