ایران امن پالیسی کیساتھ عسکری قوت بھی رکھے گا: جنرل باقری

تہران، 1 جنوری، ارنا - ایرانی مسلح افواج کے سربراہ نے کہا ہے کہ خطے میں ایران کے دشمن جان لے کہ اسلامی جمہوریہ ایران امن ڈاکٹرائن کے ساتھ عسکری طاقت بھی بھرپور انداز میں رکھے گا.

میجر جنرل ''محمد باقری'' نے بوموسی علاقے میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ آبنائے ہرمز اور خلیج فارس میں قائم سلامتی مثالی ہے اور یہ تمام کامیابیاں ایرانی مسلح افواج کی صلاحیت کی مرہون منت ہیں.
انہوں نے کہا کہ ایران کی جانب سے اعلی دفاعی آلات کے استعمال اور موثر صلاحیتوں سے خلیج فارس کی سلامتی کو یقینی بنایا گیا ہے.
جنرل باقری نے مزید کہا کہ خلیج فارس میں واقع بعض ممالک اس خطے میں افراتفری کے لئے امریکہ کو دعوت دے رہے ہیں لیکن ہم انہیں خبردار کرتے ہیں کہ ایران امن پسند پالیسی کے ساتھ اپنی عسکری طاقت بھی برقرار رکھے گا.
انہوں نے کہا کہ ضرورت پڑنے پر ایران اپنی علاقائی سالمیت کا بھرپور دفاع کرے گا اور کسی بھی ناخشگوار صورتحال کے ذمہ دار وہی ممالک ہوں گے جو یہاں افراتفری کے لئے اغیار کو بلاتے ہیں.
ایرانی سپہ سالار نے بعض مخصوص ممالک کو یہ تجویز دی ہے کہ امریکہ پر انحصار نہ کریں کیونکہ یہی امریکہ کئی برسوں سے شام میں خون خرابہ کرنے کے بعد وہاں سے نکلنے پر مجبور ہوا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایرانی عوام اور مسلح افواج خطے اور دنیا میں امن و دوستی کے علمبردار ہیں جبکہ فوج مشقوں کا مقصد بھی اسی پیغام کو اجاگر کرنا ہے.
جنرل باقری نے اس بات پر زور دیا کہ علاقے کی سلامتی صرف یہاں کے ممالک فراہم کرسکتے ہیں جبکہ اغیار کی آمد سے کشیدگی پیدا ہوگی.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@