آیت اللہ "آملی لاریجانی" ایران کی ایکسپیڈیئنسی کونسل کے نئے سربراہ مقرر

تہران، 30 دسمبر، ارنا۔ ایرانی سپریم لیڈر حضرت آیت اللہ العظمی سید "علی خامنہ ای" نے آئندہ پانج سال کے لئے تشخیص مصلحت نظام کونسل کے نئے چیئرمین کو تعینات کردیا-

تفصیلات کے مطابق قائد انقلاب اسلامی آیت اللہ خامنہ ای نے آج بروز اتوار، اپنے ایک خصوصی حکم نامے میں،چیف جسٹس آیت اللہ "صادق آملی لاریجانی" کو ایران کی تشخیص مصلحت نظام کونسل (ایکسپیڈیئنسی کونسل) کے نئے سربراہ کے طور پر تعینات کردیا.
اسلامی جمہوریہ ایران کی ایکسپیڈینسی کونسل کے سابق چیئرمین آیت اللہ ''سید محمود ہاشمی شاہرودی'' طویل علالت کے بعد 24 دسمبر کو تہران میں انتقال کرگئے.
واضح رہے کہ 44 اراکین پر مشتمل تشخیص مصلحت نظام کونسل ایران کے نظام کا ایک فیصلہ کن اور اہم ادارہ ہے، قیام قانون سازی کے حوالے سے پارلیمنٹ اور گارڈین کونسل کے درمیان پیدا ہونے والے تنازعات کے حل کے لئے 1988ء میں اس کا قیام عمل میں لایا گیا۔
اس کونسل میں حکومت کے تینوں شعبوں کے سربراہ اور گارڈین کونسل کے مذہبی ارکان شامل ہیں. قائد اسلامی انقلاب کی جانب سے ہر پانچ سال کے لئے چیئرمین، سیکرٹری اور اراکین کا انتخاب کیا جاتا ہے.
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@