امریکہ کا افغان مسئلے پر ایران کے اہم کردار کا اعتراف

اسلام آباد، 26 دسمبر، ارنا - امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون کی حالیہ رپورٹ کے مطابق، امریکہ افغانستان میں اسلامی جمہوریہ ایران کو اہم کردار کے طور پر دیکھتا ہے.

افغانستان میں مذاکرات کے ذریعے حل نکالنے کے لیے جہاں پاکستان نے ایران، چین اور روس سے مشاورت کی وہیں امریکہ نے بھی اس بات کو تسلیم کیا ہے کہ افغان تنازع کے خاتمے میں ایران سمیت یہ تینوں ممالک اہم کردار ادا کرسکتے ہیں.
امریکی محکمہ دفاع کی جانب سے رواں ہفتے کانگریس کو بھیجی گئی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ایران، افغانستان میں ایک مستحکم حکومت چاہتا ہے جو ایران کے مقاصد، دہشتگرد تنظیم داعش کے خاتمے، امریکہ/نیٹو کی موجودگی کو ختم کرنے اور ایرانی خدشات جیسے پانی کے حقوق اور سرحدی سیکیورٹی کے تحفظ کی ذمہ دار ہو.
اس رپورٹ میں جسے پاکستانی اخبار کی ویب سائیٹ ڈان نیوز نے شائع کیا، پینٹاگون نے افغانستان میں ایرانی اثر و رسوخ کو بھی تسلیم کرتے ہوئے دعویٰ کیا کہ تہران افغان حکومت کے ساتھ تعلقات، تجارت اور اقتصادی سرمایہ کاری بڑھانے کی کوشش اور رابطے میں رہنے کے لیے کثیر حکمت عملی پر گامزن ہے اور کابل کو منحرف نہ کرنے کی کوشش کے ساتھ طالبان کو حمایت فراہم کررہا ہے.
رپورٹ کے مطابق مغربی، وسطی اور شمالی افغانستان میں ایران کا شامل ہونا انتہائی اہم ہے کیونکہ یہاں افغان باشندوں کی ایران کے ساتھ ثقافت، مذہب اور زبان کے تعلقات کی ایک تاریخ ہے.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران کی اعلی قومی سلامتی کونسل کے سیکریٹری آج افغانستان کے سرکاری دورے پر کابل پہنچ گئے ہیں جہاں انہوں نے اپنے افغان ہم منصب کے ساتھ ملاقات کی.
ایڈمیرل علی شمخانی نے اس موقع پر کہا کہ افغانستان میں قیام امن و سلامتی کی خاطر ایران اور افغان طالبان کے درمیان مذاکرات ہورہے ہیں جس کا سلسلہ جاری رہے گا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@