روس ایران پر امریکی پابندیاں بے اثر کرنے کیلئے پُرعزم

ماسکو، 21 دسمبر، ارنا - روس کے سنیئر جوہری مذاکرات کار نے کہا ہے کہ ان کا ملک اسلامی جمہوریہ ایران پر امریکی پابندیوں کو بے اثر کرنے کے لئے سد باب کرے گا.

''سرگئی ریابکوف'' نے جمعہ کے روز روسی دارالحکومت ماسکو میں نائب ایرانی وزیر خارجہ برائے سیاسی امور ''سید عباس عراقچی'' کے ساتھ ملاقات کی اور کہا کہ روس ایران مخالف امریکی پابندیوں کا مقابلہ کرے گا.
ان کا کہنا تھا کہ روس ایران کے ساتھ دوطرفہ تعقات کی توسیع اور جوہری معاہدے کو تحفظ فراہم کرکے ایران پر یکطرفہ امریکی پابندیوں کے راستے میں رکاوٹ بنے گا.
اس ملاقات میں ایران اور روس کے اعلی سفارتکاروں نے دوطرفہ تعلقات، علاقائی اور عالمی امور پر بھی تبادلہ خیال کیا.
نائب روسی وزیرخارجہ اور جوہری مذاکرات کار نے مزید کہا کہ ایران اور روس کے درمیان سیاسی مذاکرات کو بڑی اہمیت حاصل ہے اور اس کا نہ صرف دونوں ملکوں کو فائدہ ہوگا بلکہ یہ علاقائی اور عالمی امن و سلامتی کے مفاد میں ہے.
انہوں نے کہا کہ ایران اور روس ایک دوسرے کے قابل بھروسہ شراکت دار ہیں اور ہم عالمی فورم میں روس کی حمایت کرنے پر اسلامی جمہوریہ ایران کے مشکور ہیں.
اس ملاقات میں سید عباس عراقچی نے روسی تعاون کو سراہتے ہوئے کہا کہ دنیا کے حالیہ مسائل کی اصل وجہ امریکہ اور اس کے اتحادیوں کی علاقائی پالیسی ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران جوہری معاہدہ ایک عالمی کامیابی ہے مگر اسے ختم کرنے کے لئے امریکی کوششوں سے عالمی سفارتکاری عمل کو نقصان پہنچ رہا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@