ایران ترکی تعلقات مشترکہ مفادات کی بنیاد پر قائم ہیں: صدر روحانی

انقرہ، 20 دسمبر، ارنا - صدر اسلامی جمہوریہ ایران نے کہا ہے کہ ایران اور ترکی کے درمیان تعلقات مشترکہ مفادات کی بنیاد پر قائم ہیں اور کوئی بھی طاقت یا ملک ہمارے برادرانہ تعلقات کو متاثر نہیں کرسکتے.

ڈاکٹر حسن روحانی نے جمعرات کے روز دورہ ترکی کے موقع پر اپنے ہم منصب رجب طیب اردوان کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے مزید کہا کہ ایران اور ترکی کے تعلقات برادرانہ ہیں اور کوئی بھی طاقت ہمارے تعلقات کو خراب نہیں کرسکتی.

انہوں نے ایران سے متعلق امریکہ کی یکطرفہ اور غیرقانونی پابندیوں کی مخالفت میں ترک حکومت بالخصوص صدر اردوان کے تعمیری مؤقف کو سراہا.

ڈاکٹر روحانی نے مزید کہا کہ ایران مخالف امریکی اقدامات دہشتگردی کے مترادف ہیں کیونکہ امریکہ کا مقصد دوسرے ممالک کو ایران کے ساتھ تعاون کرنے پر دھمکانا ہے.

انہوں نے کہا کہ امریکہ دوسرے ممالک کو سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 پر عمل نہ کرنے کے لئے شدید دباؤ ڈال رہا ہے.

ایرانی صدر نے مزید کہا کہ امریکہ کی ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی اور اس کے بعد اٹھائے گئے اقدامات عالمی قوانین کی کھلی خلاف ورزی ہیں.

انہوں نے کہا کہ غنڈہ گردی کا دور ختم ہوچکا ہے اور علاقائی ممالک اپنے مفادات کے مطابق فیصلہ کریں گے.

274**

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@