فرانس کا شام میں قومی اتحاد و آشتی کا خواہاں

تہران، 19 دسمبر، ارنا- روسی صدر کے خصوصی نمائندے برائے شامی امور نے کہا کہ دہشتگردی کے خلاف جنگ، فرانس کی ترجیحات میں سے ایک ہے اور اس سلسلے میں پیرس سیاسی طریقوں کے ذریعے شام میں قومی اتحاد و آشتی کا خواہاں ہے۔

یہ بات "فرانسوا سنمو" نے ایرانی اسپیکر کے معاون خصوصی برائے بین الاقوامی امور "حسین امیر عبداللہیان" کے ساتھ ملاقات کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے شامی مسئلے کے حل میں اسلامی جمہوریہ ایران کے کردار پر زور دیتے ہوئے کہا کہ شامی حکومت کے مسائل، اس ملک میں بعض عالمی طاقتوں کی دخل اندازی کی بدولت ہے۔
انہوں نے کہا کہ اگر ایران و روس، شام میں کردار ادا نہیں کیا تھا تو اب اس ملک کی صورتحال کچھ اور تھی۔
روس کے نمائندے نے مزید کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ ہماری ترجیحات میں سے ایک ہے کیونکہ شام اور عراق کے بعض حصوں میں ابھی دہشت گردی کے خلاف جنگ جاری ہے۔
انہوں نے سلامتی کونسل کی قرارداد 2254پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ فرانس سیاسی طریقوں کے ذریعے شام کے تمام گروپوں کے درمیان قومی اتحاد و آشتی کا خواہاں ہے۔
انہوں نے کہا کہ فرانس کو سلامتی کونسل کے مستقل رکن کے ناطے سے شامی مسئلے کے حل میں بہت اہم کردار حاصل ہے ۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@