ایرانی پارلیمنٹ کی اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کے خلاف قرارداد کی مذمت

تہران، 19 دسمبر، ارنا – ایرانی مجلس (پارلیمنٹ) کے قومی اور خارجہ پالیسی کمیشن نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی جانب سے انسانی حقوق کے خلاف قرارداد کی توثیق کی شدید الفاظ میں مذمت کی.

ایرانی پارلیمنٹ نے بدھ کے روز اپنے ایک بیان میں کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران دہشتگردی کا سب سے بڑا متاثر ہونے والا ملک ہے اور دوسرے ممالک کے مقابلے میں اس کے دشمن اور مخالف عناصر انسانی حقوق کی خلاف ورزی کر رہے ہیں.
ایرانی مجلس نے اس قرارداد کو دوہری پالیسیوں کا نتیجہ قرار دیتے ہوئے اس پر ردعمل کا اظہار کیا.
اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں تیس ممالک سمیت اسلامی جمہوریہ ایران، روس، چین، پاکستان، عراق، افغانستان، لبنان اور وینزویلا نے اس قرارداد پر منفی ووٹ دے دیا اور کویت، قطر، مصر، مراکش اور الجیریا ان ممالک میں سے تھے جنہوں نے اس پر اپنی رائے کا اظہار نہیں کیا.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ کینیڈا اور بعض ممالک نے انسانی حقوق کی خلاف ورزی کی ڈرافٹ کردہ قرارداد پیش کیا اور اس پر 84 ممالک نے موافقت، 30 ممالک نے مخالفت کے ووٹ دیتے ہوئے 67 ممالک نے اپنی رائے کا اظہار نہیں کیا.
9393*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@