پڑوسیوں کیساتھ تعلقات کی توسیع ایران کیلئے بڑی اہمیت رکھتی ہے: واعظی

تہران، 14 دسمبر، ارنا - ایرانی صدر کے چیف آف اسٹاف نے کہا ہے کہ ہمسایہ ممالک کے ساتھ باہمی تعلقات اور تعاون کو بڑھانا اسلامی جمہوریہ ایران کے لئے اسٹریٹجک پوزیشن کا حامل ہے.

یہ بات ''محمود واعظی'' نے دورہ ترکی کے موقع پر خاتون ترک وزیر تجارت ''روشار بیکان'' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کہی.
ایران کے صدارتی چیف آف اسٹاف ایک اعلی سطحی سیاسی اور اقتصادی وفد کی قیادت میں ایران ترکی سربراہان مملکت کے آئندہ ہونے والی ملاقات پر مذاکرات کے لئے ترکی کے دورے پر ہیں.
واعظی نے اس موقع پر ترکی میں ٹرین حادثے پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ایرانی قوم اور حکومت کی جانب سے ترک عوام اور حکومت کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور ترکی کے درمیان قریبی تعلقات کو بڑھانے کے لئے مزید کوششیں کرنی ہوں گی.
محمود واعظی نے کہا کہ ایران اور ترکی کے صدور کی صدارت میں مشترکہ اسٹریٹجک تعاون کی اعلی کونسل کی اب تک چار نشستیں منعقد ہوئیں اور ہمیں خوشی ہے کہ جلد مستقبل میں اس کونسل کی پانچویں نشست کا بھی انعقاد کیا جائے گا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور ترکی کے سربراہان مملکت نے مشترکہ تجارتی حجم کو 30 ارب ڈالر تک لے جانے کے لئے تعمیری روڈمیپ کا تعین کیا ہے لہذا دونوں ممالک کو چاہئے کہ اس مشترکہ مقصد کے حصول کے لئے موثر اقدامات اٹھائیں.
اس ملاقات میں خاتون ترک وزیر نے کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران ترکی کے لئے ہمیشہ ایک اسٹریٹجک پارٹنر کی حیثیت رکھتا ہے اور ترکی کی نظر میں ایران کو سیاسی اور معاشی لحاظ سے غیرمعمولی مقام حاصل ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران ترکی اسٹریٹجک تعاون کونسل کی آئندہ نشست میں شرکت کے لئے صدر حسن روحانی جلد ترکی کا دورہ کریں گے جو باہمی تجارتی حجم کو 30 ارب ڈالر تک لے جانے کے لئے نہایت اہمیت کا حامل ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@