ظریف کا امریکی وزیرخارجہ کی ہرزہ سرائی پر ردعمل

تہران، 13 دسمبر، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے امریکی وزیر خارجہ کی حالیہ ہرزہ سرائی کے ردعمل میں کہا ہے کہ امریکہ اب بھی ایران کے خلاف سلامتی کونسل کی منسوخ شدہ قرارداد 1929 کا حوالہ دیتا ہے.

''محمد جواد ظریف'' نے اپنے ایک ٹوئٹر پیغام کے ذریعے ''مائیک پمپئو'' کی جانب سے ایران کے خلاف اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں بے بنیاد الزامات کا جواب دے دیا.
انہوں نے کہا کہ امریکی وزیرخارجہ سے یہ بات ظاہر ہوتا ہے کہ امریکہ اور اس کے اتحادی ایران کے خلاف سلامتی کونسل کی منسوخ شدہ قرارداد 1929 کا سہارا لیتے ہیں.
ظریف نے بتایا کہ مائیک پمپئو نے ایران جوہری معاہدے سے منسلک سلامتی کونسل کی قرارداد 2231 کی خلاف ورزی کی اتنی حد پار کردی کہ وہ اپنی اس غلطی کو چھپانے کے لئے کسی اور طرح کی خلاف ورزی کرنے کا مرتکب ہوگئے.
انہوں نے مزید کہا کہ پمپئو نے امریکہ کو سلامتی کونسل کا واحد ملک میں بدل دیا جو دوسرے ممالک کو سلامتی کونسل کی قراردادوں پر عمل کرنے سزا دیتا ہے.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ امریکی وزیر خارجہ نے گزشتہ روز سلامتی کونسل میں یہ دعویٰ کیا تھا کہ ایران قرارداد 2231 کی خلاف وزری کی ہے لہذا امریکہ ایران پر پابندیاں لگانے کا مطالبہ کرتا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@