عراقی وزیراعظم نے ایک بار پھر ایران مخالف امریکی پابندیوں کی مخالفت کردی

بغداد، 12 دسمبر، ارنا - وزیراعظم عراق ''عادل عبدالمہدی'' نے اسلامی جمہوریہ ایران سے متعلق امریکی پابندیوں پر عراقی مؤقف کو ایک بار پھر دہراتے ہوئے کہا ہے کہ ان کا ملک امریکی پابندیوں کے مخالف ہے.

عراقی وزیراعظم کا یہ بیان ایسے میں آیا جب امریکی وزیر توانائی رک پیری بغداد کے دورے پر ہیں.
عادل عبدالمہدی نے گزشتہ روز اپنی ہفتہ وار پریس بریفنگ کے دوران ایران مخالف امریکی پابندیوں سے متعلق کہا کہ ہم ایک بار پھر اپنے مؤقف کو واضح کرتے ہیں اور وہ یہ کہ عراق ان پابندیوں کا حصہ نہیں بنے گا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران سے گیس درآمدات عراق کے لئے بڑی اہم بات ہے اور ہمیں لگتا ہے کہ امریکہ کو بھی اس بات کا داراک ہوچکا ہے، اس سے متعلق دونوں ملکوں نے مختلف نشستیں منعقد کیں.
عراقی وزیراعظم نے بتایا کہ ایک عراقی وفد جلد امریکہ کے دورے پر روانہ ہوگا جہاں دونوں ممالک کے درمیان حالیہ پابندیوں پر مذاکرات ہوں گے.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے 8 مئی کو غیرقانونی طور پر ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی کا اعلان کردیا اور اس کے علاوہ ایران پر امریکی پابندیاں عائد کرنے کا بھی حکم جاری کردیا.
امریکی صدر نے ایران کو تنہائی کا شکار کرنے کے لئے اقتصادی دباؤ اور پابندیاں کا طریقہ کار اپنایا ہوا ہے جبکہ ایران نے اپنے وعدوں پر عمل کیا اور عالمی جوہری ادارہ بھی اس بات کی بارہا تصدیق کرچکا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@