ایران کا سویڈن میں یمنی فریقین کے درمیان ابتدائی مفاہمت کا خیرمقدم

تہران، 11 دسمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے اقوام متحدہ کی نگرانی میں سویڈن میں یمنی فریقین کے درمیان طے پانے والی ابتدائی مفاہمت کا خیرمقدم کیا ہے.

وزیر خارجہ ''محمد جواد ظریف'' نے منگل کے روز اپنے ایک ٹوئٹر پیغام میں سیکریٹری جنرل اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے کی نگرانی میں یمنی گروہوں کے درمیان حاصل ہونے والی ابتدائی مفاہمت کا خیرمقدم کیا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران یمنیوں کے درمیان مذاکرات جاری رکھنے اور تمام مسائل پر حتمی نتائج تک پہنچنے کی بھرپور حمایت کرتا ہے.
ظریف نے اس بات پر زور دیا کہ اب وقت آگیا ہے کہ یمن پر جارحیت کرنے والی بیرونی فورسز فضائی بمباری کے خاتمے کے ساتھ انسانیت کے خلاف جرائم کو بند کریں.
یاد رہے کہ یمن کے لئے اقوام متحدہ کے خصوصی نمائندے مارٹن گرفتھس کی موجودگی میں گزشتہ ہفتے سے سویڈن کے دارالحکومت اسٹاک ہوم میں یمنی گروہوں کے درمیان مذاکرات کا آغاز کردیا گیا.
صنعا ایئرپورٹ کی بحالی، الحدیدہ بندرگاہ پر جھڑپوں کا خاتمہ، محاصرے کے فورے خاتمے اور متاثرین کے لئے امداد سامان کی ترسیل ان مذاکرات کے اہم ایجنڈے میں شامل ہیں.
اس سے پہلے یورپی یونین کی چیف خارجہ پالیسی نے سوئڈ مذاکرات کی حمایت کرنے پر اسلامی جمہوریہ ایران کے مؤقف کو سراہا اور کہا کہ ایران کے تعمیری کردار کے بعد حوثی گروہ سوئڈن مذاکرات میں شامل ہوا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@