عرب حکمران بیہودہ باتوں کے بجائے کویتی امیر کے طرز عمل پر چلیں: ایران

تہران،10 دسمبر، ارنا- اسلامی جمہوریہ ایران نے خلیج فارس تعاون کونسل کے رکن ممالک کے حالیہ ایران مخالف بیان کے ردعمل میں عرب حکمرانوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ بیہودہ باتوں کے بجائے ایران سے متعلق کویتی امیر کے رویے پر عمل کریں.

ترجمان دفترخارجہ 'بہرام قاسمی' نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ کویت نے حالیہ برسوں میں ایران سے متعلق بغیر تناؤ کے مؤقف اپنا جو ہمیشہ تعمیری ثابت ہوا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ خلیج فارس تعاون کونسل کے ممالک بجائے اس کے کہ بے بنیاد بیانات دیں امیر کویت کے طرز عمل کو اپنائیں جس سے علاقائی اقوام مزید مصائب مسلط نہ ہوں۔
قاسمی نے کہا کہ ایسا نظر آتا ہے کہ خلیج فارس تعاون کونسل، اس تنظیم کے بعض اراکین کے غلط اور تباہ کن رویوں کے زیر اثر اپنے موقفوں کا اعلان کر رہی ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ خلیج فارس تعاون کونسل کو منطقی موقف اپناتے ہوئے اندورنی اور بیرونی غلط فہمیوں اور اختلافات کو حل کرنے کے راستے پر اقدامات کرنا چاہیے لیکن افسوس کی بات ہے کہ بغیر اسی موقف کو اپناتے ہوئے صرف بعض ممالک کی اشتعال انگیز اور تفرفہ انگیزی پر مبنی پالیسیوں کو بے شرمی سے سراہتی ہے۔
ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ خلیج فارس تعاون کونسل، اس تنظیم کے تمام ارکان کے نام پر بعض ممالک کے غیر تعمیری موقفوں کو اعلان کرنے کا ذریعہ بن گئی ہے جو علاقائی امن و استحکام کے راستے پر گامزن ہونے کیلئے بالکل مددگار ثابت نہیں ہوگا۔
انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران کے نقطہ نظر میں ریاض اجلاس کا اختتامی بیان، اس اجلاس میں تمام شریک ممالک کا موقف نہیں ہے۔
قاسمی نے کہا کہ مذکورہ بیان کے متن اور اسلامی جمہوریہ ایران کے سامنے بعض اراکین کے عملی رویوں کے درمیان جو تضاد دیکھا جاتا ہے وہ سعودی عرب کو اپنے مقاصد حاصل کرنے میں ناکامی کی گواہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ ایران کے تین جنوبی جزائر کے بارے بے بنیاد دعووں سے حقیقت کو بدلا نہیں جاسکتا اور یہ جزائر ایران کی مکمل ملکیت میں ہیں۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@