ایران جوہری معاہدے کو آگے بڑھانے پر غور کررہے ہیں: بیلجیم

لندن، 10 دسمبر، ارنا - بیلجیم نے کہا ہے کہ یورپ، ایران اور عالمی قوتوں کے درمیان طے پانے والے جوہری معاہدے کو آگے بڑھانے کے طریقوں پر غور کررہا ہے.

یہ بات بیلجیم کے وزیر خارجہ ''ڈڈیر رینڈیرس'' نے برسلز میں 28 یورپی ممالک کے وزرائے خارجہ کے مشترکہ اجلاس کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہی.
یورپی وزرائے خارجہ کے اس اجلاس کا مقصد ایران جوہری معاہدے کے تحفظ اور ایران کے ساتھ معاشی تعلقات جاری رکھنے سے متعلق یورپ کے مخصوص مالیاتی میکنزم کے نفاذ کا جائزہ لینا ہے.
اجلاس کے آغاز سے پہلے یورپی یونین کی چیف خارجہ پالیسی فیڈریکا مغرینی نے کہا کہ اس جلاس میں وینزویلا، ایران، مغربی بالقان خطے اور افریقی معاملات پر تفصیلی گفتگو ہوگی.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے گزشتہ 8 مئی کو غیرقانونی طور پر ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی کا اعلان کردیا اور اس کے علاوہ ایران پر امریکی پابندیاں عائد کرنے کا بھی حکم جاری کردیا.
امریکی صدر نے ایران کو تنہائی کا شکار کرنے کے لئے اقتصادی دباؤ اور پابندیاں کا طریقہ کار اپنایا ہوا ہے جبکہ ایران نے اپنے وعدوں پر عمل کیا اور عالمی جوہری ادارہ بھی اس بات کی بارہا تصدیق کرچکا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@