زاہدان میں ایران پاکستان سرحدی کمیشن کے 22ویں اجلاس کا انعقاد

زاہدان، 10 دسمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران اور پاکستان کے درمیان مشترکہ سرحدی کمیشن کے 22ویں اجلاس کا آج زاہدان میں آغاز ہوگیا.

اس اجلاس میں دونوں ممالک کے اعلیٰ حکام شریک ہیں.اور 'محمد ہادی مرعشی' ایرانی وفد اور 'اختر نذیر' بھی پاکستانی وفد کی قیادت کر رہے ہیں.
مرعشی نے ایران اور پاکستان کے درمیان دوستانہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان مشترکہ تعلقات کی توسیع پاکستانی صوبے بلوچستان اور ایران کے جنوب مشرقی علاقوں کے درمیان سیکورٹی اور اقتصادی تعلقات کو فروغ دے سکتی ہے.
انہوں نے دونوں ممالک کےدرمیان سیاسی، مذہبی، ثقافتی مشترکات کا حوالہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم ایرانی صوبے سیسستان و بلوچستان اور پاکستان کے صوبے بلوچستان کے عوام کے درمیان دوستانہ گہرے اور قریبی تعلقات کی وجہ سے ان دو صوبوں کو ایک دوسرے سے الگ نہیں کر سکتے ہیں اسی لیے ہم اس علاقوں میں سیکورٹی کو برقرار کرنا ناگزیر ہیں.
پاکستانی سرحد سے ملحقہ ایرانی صوبے سیستان و بلوچستان کے دارالحکومت زاہدان میں سرحدی کمیشن کے اجلاس میں شرکت کیلئے پاکستانی وفد چیف سیکرٹری بلوچستان ڈاکتر اخترنذیر کی قیادت میں تفتان (میرجاوہ بارڈر) کے راستے سے ایران پہنچ گیا.
پاکستانی وفد میں سیکرٹری داخلہ، آئی جی بلوچستان پولیس، سیکرٹری خزانہ، ایڈیشنل آئی جی پولیس، زاہدان میں پاکستانی قونصلر جنرل محمد رفیع، ڈپٹی کمشنر نوشکی، ڈپٹی کمشنر واشک، ڈپٹی کمشنر پنجگور، ڈپٹی کمشنر گوادر، ڈپٹی کمشنر کیچ اور پاکستان آرمی، فرنٹیئر کور، ایف آئی اے ، پاکستان کسٹمز، اینٹی نارکوٹکس فورس، سروے آف پاکستان، پاکستان کوسٹ گارڈز اور وفاقی وزارت داخلہ کے حکام بھی شامل ہیں.
9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@