پاکستان نے مغوی ایرانی اہلکاروں کا مسئلہ حل کرانے کا یقین دلایا ہے: لاریجانی

تہران، 8 دسمبر، ارنا- ایرانی اسپیکر نے کہا ہے کہ ہم نے پاکستان سے مطالبہ کیا تھا کہ وہاں کی فوج اور سیکورٹی ایجنسیاں دہشتگردوں کے پاس باقی کے 7 ایرانی گارڈز کی رہائی کے لئے موثر اقدامات کریں جس پر پاکستان نے ہمیں بھرپور تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے.

"علی لاریجانی" نے مزید کہا کہ پاکستان نے ہمیں یقین دلایا ہے کہ وہ اس مسئلے کے خاتمے کے لئے کردار ادا کرے گا.
انہوں نے کہا کہ پاکستان نے ایران سے مغوی اہلکاروں کے مسئلے کو دیکھنے کا وعدہ کیا ہے.
ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر نے اس مسئلے کے حل کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پاک ایران مشترکہ سرحدوں پر عدم استحکام پھیلانے میں بعض دشمن ممالک کی سازشیں درکار ہیں جن کا مقصد پاکستان اور ایران کے تعلقات میں کشیدگی پیدا کرنا ہے۔
انہوں نے چھ ملکی کانفرس اسپیکرز کے دوسرے دور کے نتائج کے بارے میں کہا کہ اس کانفرنس میں شریک ممالک کے اسپیکروں نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں اپنی تجاویز پیش کرتے ہوئے اس لعنت سے نمٹنے کے سلسلے میں قوانین کی فراہمی کے لئے عملی اقدامات اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے۔
انہوں نے یورپی ممالک کے اجلاس میں دہشت گردوں کی موجودگی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ انھیں اپنے اس اقدام سے مایوس ہونا چاہیے-
انہوں نے شام اور عراق میں دہشت گرد گروپ داعش میں امریکہ اور یورپی ممالک کے شہریوں کی رکنیت پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ جب یہ دہشتگرد اپنے ملک میں واپس جاتے ہیں تو ان کے ملک کی منصوبہ بندیوں کو مشکلات کا سامنا ہوگا۔
لاریجانی نے ایران مخالف امریکی پابندیوں پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ اسپیکرز کانفرنس میں شریک ممالک میں سے کوئی بھی امریکی غیرقانونی رویوں سے اتفاق نہیں کرتا ہے اور امریکہ اسی طرح کے اقدامات سے کچھ حاصل نہیں کرے گا۔
ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکرنے انسداد دہشتگردی کے حوالے سے کانفرنس میں شریک ممالک کے پختہ عزم پر زور دیا۔
9467*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@