امریکی رویے سے دنیا میں بدنظمی پیدا ہوئی ہے: لاریجانی

تہران، 8 دسمبر، ارنا - ایرانی مجلس (پارلیمنٹ) کے اسپیکر نے کہا ہے کہ امریکی حکمرانوں کے رویے سے دنیا پر بدنظمی کی کیفیت پیدا ہوئی ہے اور عالمی سطح پر جو تھوڑا بہت نظم و ضبط تھا وہ بھی ختم ہوگیا.

ان خیالات کا اظہار ''علی لاریجانی'' نے تہران میں اپنے ترک ہم منصب ''بن علی یلدرم'' کے ساتھ ایک ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا.
یہ ملاقات ایران کی میزبانی میں منعقد ہونے والی دوسری اسپیکرز کانفرنس کے موقع پر ہوئی جس میں شرکت کے لئے ترک پارلیمنٹ کے اسپیکر ایک پارلیمانی وفد کے ہمراہ تہران کے دورے پر ہیں.
اس موقع پر علی لاریجانی نے ترک حکومت کا ایشیائی پارلیمانی اسمبلی کی میزبانی پر شکریہ دا کیا جس کا اجلاس گزشتہ دنوں ترکی میں منعقد ہوا تھا.
انہوں نے ایران اور ترکی کے درمیان اقتصادی اور سیکورٹی کے شعبوں میں مشترکہ تعاون کو مزید بڑھانے پر بھی زور دیا اور کہا کہ خطے میں ممالک کے درمیان مسائل کو سیاسی طریقوں سے حل کرنا چاہئے.
علی لاریجانی نے مزید کہا کہ آج امریکی رویے کی وجہ سے مختلف ممالک اور قوموں نے اس سے دوری اختیار کرلی ہے جو خوش آئند بات ہے اور اس سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ امریکی اقدامات کی وجہ سے علاقائی ممالک کے درمیان تعاون کو مزید فروغ مل رہا ہے.
انہوں نے کہا کہ شام میں قیام امن سے متعلق آستانہ عمل علاقائی ممالک کے درمیان تعاون کی ایک مثال ہے جبکہ آج ممالک اس بات پر یقین رکھتے ہیں کہ مسائل کو فوجی طریقے سے نہیں بلکہ سیاسی ذریعے سے حل کرنا چاہئے.
اس ملاقات میں ترک اسپیکر نے ایرانی علاقے چابہار میں حالیہ دہشتگرد حملے کی شدید مذمت کی.
انہوں نے 6 ملکی اسپیکرز کانفرنس کی میزبانی کرنے پر اسلامی جمہوریہ ایران کا شکریہ بھی ادا کیا.
بن علی یلدرم نے کہا کہ امریکہ کے حالیہ فیصلوں سے خطے پر منفی اثرات مرتب ہوں گے. امریکہ آج ڈالر کے ذریعے ممالک کو دھمکا رہا ہے.
ترک اسپیکر کا کہنا تھا کہ امریکہ عالمی قوانین کی پرواہ کئے بغیر بڑی آسانی سے عالمی معاہدوں سے نکل رہا ہے جس سے دنیا افراتفری کا شکار ہوتی ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ممالک کے درمیان مقامی کرنسی سے تجارت کرنے کی ضرورت ہے اور آج ہم ڈالر کا استعمال کئے بغیر دوسروں سے تجارت کو فروغ دے رہے ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@