ایران پر اقوام متحدہ سے ہٹ کر پابندیوں کو تسلیم نہیں کرتے: چین

بیجنگ، 6 دسمبر، ارنا - چین نے یہ واضح کردیا ہے کہ وہ دوسرے ممالک بالخصوص اسلامی جمہوریہ ایران کے خلاف امریکہ کی یکطرفہ پابندیوں جو ماورائے سلامتی کونسل ہیں، کی مخالفت کرتا ہے.

چینی ترجمان ''گنگ سوانگ'' نے جمعرات کے روز ملکی اور غیرملکی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چین، ایران سے متعلق اقوام متحدہ کے قوانین سے خارج پابندیوں کا پابند نہیں.
انہوں نے ایران پر امریکی پابندیوں کی خلاف ورزی کے جرم میں کینیڈا میں چینی کمپنی ہواوی کے فنانس ڈائریکٹر کی گرفتاری پر اپنے ردعمل میں کہا کہ ہم ان پابندیوں کی تسلیم نہیں کرتے جو سلامتی کونسل کے قوانین کے برعکس ہوں.
چینی دفترخارجہ کے ترجمان نے کہا کہ ہم متعدد بار اس موقف کا اعلان کرچکے ہیں اور آج بھی کہتے ہیں کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے مستقل رکن کی حیثیت سے چین نے ہمیشہ پابندیوں کے قوانین پر من و عن عمل کیا ہے مگر دوسرے ممالک کے خلاف امریکہ کی یکطرفہ پابندیوں کو تسلیم نہیں کرے گا.
انہوں نے مزید کہا کہ ہواوی کمپنی نے بھی اپنے بیان میں یہ واضح کردیا ہے کہ مذکورہ کمپنی کی سرگرمیاں عالمی قوانین کے مطابق ہیں.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ کینیڈین پولیس نے امریکی درخواست پر ہواوی کمپنی کے شعبہ فنانس کی خاتون ڈائریکٹر کو ایران سے متعلق امریکی پابندیوں کی مبینہ خلاف ورزی کے جرم میں مغربی کینیڈا کے شہر وینکوور سے گرفتار کرلیا ہے جس کے بعد انھیں امریکہ منتقل کیا جائے گا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@