مغربی دباؤ سے نمٹنے کے لئے ایران چین مشترکہ تعاون اہم قرار

بیجنگ، 5 دسمبر، ارنا - چین کی یونیورسٹی رین مین کی خاتون نائب سربراہ نے کہا ہے کہ اسلامی جمہوریہ ایران اور چین کو مغرب کی جانب سے ایک جیسے دباؤ کا سامنا ہے جن سے نمٹنے کے لئے اجتماعی تعاون کو مزید بڑھانے کی ضرورت ہے.

پروفیسر ''وانگ یوجی'' نے بدھ کے روز ارنا نیوز کے نمائندے سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ ایران اور چین کے خلاف مغربی ممالک کے سیاسی اور معاشی دباؤ غیرتعمیری اور غیرمنصفانہ ہے لہذا دونوں ملکوں کو چاہئے ترقیاتی تعاون کے ذریعے ان مشکلات پر قابو پالیں.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور چین کی پوزیشن اتنی مضبوط ہے کہ دونوں کو بیرونی مدد کی کوئی ضرورت نہیں اور وہ ایک دوسرے کے تعاون کی مدد سے مشترکہ ترقی کے اہداف کو حاصل کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں.
چینی پروفیسر کا کہنا تھا کہ مشرقی ممالک بالخصوص چین اور ایران کی ترقی کا واحد راستہ اندرونی وسائل اور قابلیت پر توجہ دینا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران اور چین پر مغربی دباؤ صرف سیاسی اور معاشی شعبوں تک محدود نہیں بلکہ ثقافتی اور سماجی شعبوں کو بھی بیرونی دباؤ کا سامنا ہے.
پروفیسر وانگ یوجی کے مطابق، مغربی تہذیب کے مقابلے میں ایران اور چین کی تہذیب اور ثقافت زیادہ گہری اور پختہ ہیں بلکہ دنوں عوام کی ثقافت کی جڑیں ہزاروں سال پرانی ہیں.
انہوں نے ایران اور چین کی جامعات کے درمیان مشترکہ تعاون کو بڑھانے پر بھی زور دیا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@