امریکہ انفرادیت اور پابندیوں کے نشے میں دھت ہے: ایرانی وزیر ٹیکنالوجی

باکو، 5 دسمبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی نے کہا ہے کہ امریکہ آج دنیا میں انفرادیت کی بنیاد پر اقدامات کرنے اور دوسروں پر غیرقانونی پابندیاں لگانے کے نشے میں دھت ہے.

یہ بات ''محمد جواد آذری جہرمی'' نے بدھ کے روز جمہوریہ آذربائیجان کے دارالحکومت باکو میں بین الاقوامی کیسپین انوویشن کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ آج ہمیں دنیا میں ایک ایسی حکومت کا سامنا ہے جو انفرادیت، یکطرفہ اقدامات اور پابندیوں کی عادی ہے اور اس کا یہ رویہ تمام دنیا کو خطرے میں ڈال دیا ہے.
ایرانی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی نے اس بات پر زور دیا کہ دنیا کو یکطرفہ اقدامات اور پابندیوں سے درپیش خطرات سے نمٹنے کے لئے علاقائی بلاک کی تشکیل اور ہمسایوں کے درمیان اجتماعی تعاون کی توسیع ناگزیر ہے.
انہوں نے گزشتہ سال ایران، آذربائیجان، روس اور ترکی کے درمیان مشترکہ ٹیکنالوجی مرکز اور سرگرمیوں سے متعلق دستخط ہونے والے چارفریقی معاہدے کا حوالہ دیتے ہوئے مزید کہا کہ یہ معاہدہ خطے میں مضبوط بلاک کی تشکیل کی ایک مثال ہے.
آذری جہرمی نے کہا کہ آج دنیا چوتھے صنعتی انقلاب یا ڈیجیٹل تبدیلی کی طرف بڑھ رہی ہے، بعض ممالک کو ان صورتحال کی وجہ سے کچھ مسائل کا سامنا ہے لہذا یہ کانفرنس ممالک کی جانب سے ان مشکلات سے نمٹنے کے لئے مددگار ثابت ہوگی.
انہوں نے مزید کہا کہ ایران نے ڈیجیٹل تبدیلی کے دور میں اہم اقدامات اٹھائے ہیں اور اس مقصد کے لئے ایران کے نوجوان ماہرین نے بھی مواصلات اور ٹیکنالوجی کی ترقی کے لئے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کیا ہے.
ایرانی وزیر انفارمیشن ٹیکنالوجی نے اس عزم کا اعادہ کیا ہےکہ ہم ڈیجیٹل اور ٹیکنالوجی سے متعلق اپنے تجربات کو دوسرے ممالک سے تبادلہ کرسکتا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@