عمان میں مسلم ممالک کے درمیان سائنسی تجربات پر چوتھی نشست کا انعقاد

تہران، 3 دسمبر، ارنا - سلطنت عمان کی میزبانی میں اسلامی ممالک کے درمیان سائنسی اور ٹیکنالوجی تجربات (STEP) کے تبادلے سے متعلق چوتھے اجلاس کا آغاز کردیا گیا ہے جس میں 20 ممالک کے 80 سائنسدان شریک ہیں.

اس نشست کا انعقاد عمانی دارالحکومت مسقط کی سلطان قابوس یونیورسٹی میں ہوا جس کی افتتاحیہ تقریب میں خطاب کرتے ہوئے یونیورسٹی کی نائب سربراہ "رحمہ المحروقی" نے کہا کہ اس دنیائے اسلام کے سائنسدان اور اسلامی ریاستوں کے غیرمسلم سائنسدان مل کر تحقیقی اور سائنسی شعبوں میں اپنے مقالات اور تجربات کو پیش کرنے کے علاوہ اس حوالے سے درپیش مشکلات پر تبادلہ خیال کریں گے.
اس موقع پر ایران کے ادارہ نینو ٹیکنالوجی ترقی کے سیکریٹری "سعید سرکار" نے کہا کہ مسلم سائنسدانوں کے درمیان تعلقات کی سطح کم ہے تاہم STEP جیسے اجلاس کے انعقاد سے سائنسی ماہرین کے درمیان باہمی تعاون کے لئے اچھی فضا قائم ہوگی جس سے مسلم معاشرے کی زندگی کے معیار کو مزید بہتر بنایا جاسکتا ہے.
صحت، توانائی اور پانی اس اجلاس کے ایجنڈے کے اہم موضوعات ہیں اور ان شعبوں میں نینو ٹیکنالوجی، جیو ٹیکنالوجی، مواصلاتی اور معلوماتی ٹیکنالوجی کے استعمال کا جائزہ لیا جائے گا.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ المصطفی (ص) ایوارڈ فاؤنڈیشن کے تحت 2018 کینس بین الاقوامی سائنسی (KANS) مقابلوں میں بہترین کارکردگی دیکھانے والے سنگاپوری پروفیسر جکی یینگ اور ایرانی سائنسدان محمد امین شکرالہی بھی اس نشست میں شریک ہیں.
9393*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@