ظریف کی سعودی وزیرخارجہ کے ایرانی حکام کیساتھ رابطے کی تردید

اسلام آباد، 31 اکتوبر، ارنا - ایرانی وزیر خارجہ نے ان کے سعودی ہم منصب کی جانب سے ایرانی حکام کے ساتھ کسی بھی قسم کے ٹیلی فونک رابطے پر لاعلمی کا اظہار کرتے ہوئے اس کی تردید کردی ہے.

یہ بات 'محمد جواد ظریف' نے پاکستان کے دورے کے اختتام پر اسلام آباد میں صحافیوں کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی۔
انہوں نے ایران حکام کے ساتھ سعودی وزیر خارجہ 'عادل الجیبر' کے ٹیلی فونک رابطے سے متعلق کہا کہ جہاں تک میرے علم میں ہے ایسا کوئی رابطہ نہیں ہوا۔
انہوں نے مزید کہا کہ سعودی عرب کو خطے میں اپنی پالیسی پر نظرثانی کرنی ہوگی تا کہ اسے یہ حقیقت واضح ہو کہ ایران ہمسایہ ممالک کے ساتھ تعلقات میں دلچسبی رکھتا ہے۔
ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ ہمارا پڑوسی ایران کے ساتھ کشیدگی میں کوئی فائدہ حاصل نہیں کرسکا تاہم ہمیں امید ہے کہ بعض ہمسایہ ممالک ایسی پالیسیوں کا خاتمہ کریں.
انہوں علاقائی صورتحال بالخصوص یمنی بحران سے متعلق کہا ہے کہ وزیراعظم پاکستان نے یمنی جنگ کے خاتمے پر ایک اچھی تجویز پیش کی جس کا ہم خیرمقدم کرتے ہیں.
ظریف نے مزید کہا کہ اس تجویز کے حوالے سے انہوں نے وزیراعظم پاکستان کے علاوہ اپنے پاکستانی ہم منصب اور پاکستانی آرمی چیف سے بھی تبادلہ خیال کیا.
انہوں نے کہا کہ آج یمن میں جنگ کے فوری خاتمے کے عالمی برادری میں اتفاق رائے پائی جاتی ہے لہذا ہماری خواہش ہے کہ پاکستانی تجویز کو عملی جامہ پہنایا جائے تاہم اسلامی جمہوریہ ایران بھی اس بحران کے شروع سے ہی جنگ کے خاتمے اور نہتے عوام پر جارحیت کی بندش کا مطالبہ کرتا آرہا ہے.
**274*9467
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@