ایران کی صہیونی وزیر اعظم کے دورہ عمان پر تنقید

تہران، 27 اکتوبر، ارنا – ایرانی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے صہیونی وزیر اعظم کے دورے عمان پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ ناجائز ریاست امت مسلمہ کے درمیان تفرقہ ڈالنا اور فلسطینی قوم پر اپنے70 سالہ مظالم کو چھپانا چاہتی ہے.

یہ بات بہرام قاسمی نے گزشتہ روز ناجائز صہیونی وزیر اعظم 'نیتن یاہو' کے دورے عمان پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے کہا کہ خطی مسلم ممالک کو وائٹ ہاؤس کے دباو کی خاطر اسرائیل کو خطے میں نئے مسائل او چیلنجون کو حل کرنے کی اجازت نہیں دینی چاہیے.
قاسمی نے کہا کہ ایسا لگتا ہے کہ صدر ٹرمپ صہیونی لابی کی حیثیت سے اپنے اقتدار کے آغاز سے وائٹ ہاوس میں صہیونی ریاست(مسلمانوں کا قبلہ اول کے غاصب) کے ناجائز مفادات کو پورا کرنا چاہتا ہے.
ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے مزید بتایا کہ تاریخ اور تجربات سے یہ پتہ چلتا ہے کہ امریکہ اور صہیونی حکومت کے غیر قانونی مطالبات کو قبول کرنا فلسطینی قوم اور امت مسلمہ کے برحق حقوق کو پامال کرنا کے مترادف ہے.
9410*274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@