جوہری معاہدے سے نکل کر امریکہ نے اپنی ہی ساکھ کو نقصان پہنچایا: ایرانی سفیر

لندن، 25 اکتوبر، ارنا - برطانیہ میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر نے کہا ہے کہ امریکہ نے ایران جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے دنیا میں اپنی ہی ساکھ کو نقصان پہنچایا ہے.

'حمید بعیدی نژاد' نے اپنے ٹوئٹر اکاونٹ میں لکھا ہے کہ آج امریکی انتظامیہ تذبذب کا شکار نظر آتی ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ امریکہ کے سامنے دو راستے ہیں، یا وہ جوہری معاہدے کی خلاف ورزی کا تسلسل جاری رکھتے ہوئے دنیا میں اپنی ساکھ کو مزید نیچے گرائے یا تو وہ جوہری معاہدے میں پھر سے شامل ہو کر اپنے عالمی وعدوں پر عمل کرے.
ایرانی سفیر نے کہا کہ امریکہ کے پاس کوئی تیسرا راستہ نہیں، لندن میں امریکی سفیر نے برطانوی تجارتی کمپنیوں کو دھمکی دی ہے کہ یا وہ ایران کا ساتھ دیں یا تو وہ امریکہ کے ساتھ رہیں.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے گزشتہ 8 مئی کو غیرقانونی طور پر ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی کا اعلان کردیا اور اس کے علاوہ ایران پر امریکی پابندیاں عائد کرنے کا بھی حکم جاری کردیا.
ٹرمپ نے رواں سال کے 6 اگست کو ایران کے خلاف پابندیوں کی تجدید پر دستخط کردئے.
امریکی صدر کے اس فیصلے کی وجہ سے ایران میں پہلے سے موجود بعض غیرملکی کمپنیاں تذبذب کا شکار ہوئیں اور وہ یہ اعلان کرنے پر مجبور ہوئیں کہ امریکی پابندیوں کے اثرات سے بچنے کے لئے وہ ایران کے ساتھ تعاون میں کمی لائیں گی.
امریکی صدر نے ایران کو تنہائی کا شکار کرنے کے لئے اقتصادی دباؤ اور پابندیاں کا طریقہ کار اپنایا ہوا ہے جبکہ ایران نے اپنے وعدوں پر عمل کیا اور عالمی جوہری ادارہ بھی اس بات کی بارہا تصدیق کرچکا ہے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@