ایران میں انسانی حقوق کی بالادستی میں اغیار کا کوئی کردار نہیں: ایرانی مندوب

نیو یارک، 25 اکتوبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران نے انسانی حقوق سے متعلق اقوام متحدہ کے خصوصی رپورٹر کی حالیہ رپورٹ پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ ایران میں انسانی حقوق کی بالادستی کو یقینی بنایا گیا ہے لیکن اس پیشرفت میں اغیار ملکوں کا کوئی کردار نہیں.

یہ بات ایرانی نمائندہ 'محمد حسنی نژاد' نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی تیسری کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے اقوام متحدہ کے رپورٹر کی حالیہ رپورٹ پر اپنے ردعمل میں کہا کہ آج تاریخ خاموش ہے مگر یقینا اسے انسانی حقوق کے نام نہاد دعویداروں کے جرائم اور جھوٹ یاد رہے گی.
انہوں نے مزید کہا کہ اسلامی جمہوریہ ایران میں قانون کی بالادستی اور سلامتی سب عوام کے مرہون منت ہے، لہذا انسانی حقوق کی بہتری میں ایرانیوں کی جد و جہد کے عمل میں اغیار کا کوئی کردار نہیں.
ایرانی نمائندے نے اجلاس میں شریک ممالک سے استفسار کیا کہ ایران کے خلاف امریکہ کی منفی اور جارحانہ پالیسیوں سے کس کو خبر نہیں؟ کیا کوئی انسانی حقوق کا غلط فائدہ اٹھانے کے امریکہ اقدامات سے باخبر نہیں.
حسنی نژاد نے مزید کہا کہ یو این رپورٹر نے پہلی بار ایرانی قوم پر معاشی پابندیوں کے مضمرات پر بات کہی، تاہم بہت مختصر صحیح مگر ہم اسے ایک مثبت پیشرفت سمجھتے ہیں.
انہوں نے ایران مخالف امریکی پابندیوں سے متعلق عالمی عدالت انصاف کے ایران کے حق میں فیصلے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ عالمی عدالت کے فیصلے سے ایسے غیرقانونی پابندیاں مزید اُجاگر ہوئیں.
ایرانی نمائندے نے اس بات پر زور دیا کہ اسلامی جمہوریہ ایران باہمی احترام پر مبنی مکالمے، پرامن سفارتکاری اور تعاون پر یقین رکھتا ہے مگر بدقسمتی سے اقوام متحدہ کے رپورٹر نے اپنی رپورٹ میں ان نکات کا ذکر نہیں کیا.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@