ایران کی تہران یونیورسٹی میں کشمیر سے متعلق ثقافتی کانفرنس کی میزبانی

تہران، 23 اکتوبر، ارنا – اسلامی جمہوریہ ایران کی تہران یونیورسٹی کے شعبہ اردو کی جانب سے منگل کے روز کشمیر سے متعلق ایک ثقافتی نشست کا انعقاد کیا گیا جس میں تہران میں تعینات خاتون پاکستانی سفیر "رفعت مسعود" نے شرکت کی.

تفصیلات کے مطابق، منعقد ہونے والی نشست میں خاتون پاکستانی سفیر اور پاکستانی سفارتخانے کے اہلکاروں کے علاوہ شعبہ اردو تہران یونیورسٹی کے اساتذہ ڈاکٹر محمد کیومرثی، ڈاکٹر علی بیات، ڈاکٹر علی کاؤسی نژاد، ڈاکٹر زیب النسا علیخان، ڈاکٹر وفا یزدان منش، ڈاکٹر فرزانہ اعظم لطفی، ڈاکٹر راشد عباس نقوی، دوسرے اساتذہ اور شعبہ اردو کے طلباء و طالبات نے بھر پور شرکت کی۔
تہران یونیورسٹی کے ڈین فیکلٹی آف فارن لنگوئجز اور لٹریچر ڈاکٹر علیرضا ولی پور نے بھی تمام مہمانوں کو خوش آمدید کرتے ہوئے پاک ایران تعلقات اور شعبہ اردو کی تعلیمی اور ادبی سرگرمیوں پر روشنی ڈالی.
اس موقع پر رفعت مسعود نے کہا کہ پاکستان دونوں ممالک کے درمیان ثقافتی اور تعلیمی شعبوں میں مشترکہ تعلقات کو مزید بڑھانے کے مقصد سے اساتذہ اور طلبا کے تبادلوں کے لئے مناسب اقدامات کریں گے.
انہوں نے اسلامی جمہوریہ ایران میں اردو کے فروغ کو سراہتے ہوئے کہا کہ ہم پاکستان میں فارسی زبان کے فروغ کے لئے بھرپور کوشش کررہےہیں-
انہوں نے ثقافتی نشست کے موضوع پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ کشمیر ایک خوبصورت وادی ہے مگر وہاں کے عوام کی آنکھیں دکھ اور پریشانی سے پرنم ہیں لہذا ہم تمام ممالک سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس مسئلے کے حل کے لئے تعاون کریں.
خاتون پاکستانی نے مسئلہ کشمیر پر ایرانی سپریم لیڈر کی توجہ کو سراہتے ہوئے کہا کہ آیت اللہ خامنہ ای نے ہمیشہ کشمیر کے بحران کے حل کے لئے عالمی برداری کے درمیان باہمی تعاون اور یکجہتی پر زور دیا ہے.
انہوں نے تہران یونیورسٹی کے شعبہ اردو کی ادبی سرگرمیوں کی تعریف کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا کہ پاکستان کی جانب سے دونوں ممالک کے درمیان فارسی اور اردو کی مزید ترقی کے لئے ہر ممکن مدد فراہم کی جائے گی.
9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@