پاکستانی زائرین کو سہولتوں کی فراہمی کیلئے ایرانی جنرل کے خصوصی احکامات

تہران، 20 اکتوبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران کی پاسداران انقلاف فورس کے سربراہ نے چہلم امام حسین (ع) کی مناسبت سے ایران کے راستے عراق جانے والے لاکھوں پاکستانی زائرین کے لئے سہولتوں کی فراہمی کے لئے خصوصی احکامات جاری کردئے.

میجر جنرل 'محمد علی جعفری' نے پاکستان سرحد سے ملحقہ ایرانی صوبے سیستان و بلوچستان میں تعینات پاسداران انقلاب فورس کے کمانڈر بریگیڈیر جنرل 'امان اللہ گشتاسبی' کے نام خصوصی پیغام دیا ہے.
انہوں نے حکم دیا ہے کہ لاکھوں کی تعداد میں پاکستانی زائر ایران میں داخل ہورہے ہیں لہذا ان کی خدمت کے لئے تمام وسائل اور ضروریات کو بروئے کار لایا جائے.
جنرل جعفری نے اپنے خصوصی احکامات میں مزید کہا کہ صوبے میں سرکاری اور غیرسرکاری ادارے اور تنظیمیں بروقت پاکستانی زائرین کے لئے تمام سہولتوں کی فراہمی کو یقینی بنائیں.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ پاک ایران کی مشترکہ سرحدی گیٹ میرجاوہ (تفتان) سیستان صوبے کے 78 کلومیٹر کی دوری پر قائم ہے جہاں سے پاکستانی زائر ایران میں داخل ہوتے ہیں.
اسلامی جمہوریہ ایران کی پاکستان کے ساتھ 900 کلومیٹر سے زائد زمینی سرحد ہے.
پاکستانی زائر میرجاوہ گیٹ سے داخل ہوتے ہوئے عراق جانے کے لئے صوبے سیستان و بلوچستان میں کم سے کم ایک رات قیام کرتے ہیں.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@