ایران اور پاکستان کے سرحدی تجارت کے فروغ کیلئے مفاہمت پر دستخط

اسلام آباد، 18 اکتوبر، ارنا - اسلامی جمہوریہ ایران اور پاکستان نے مشترکہ سرحدی تجارتی کمیٹی کے چھٹے اجلاس کے اختتام پر سرحدی تجارتی تعاون کو بڑھانے کے حوالے سے مفاہمت کی یاداشت پر دستخط کئے ہیں.

تفصیلات کے مطابق، یہ مفاہمت 29 نکات پر شامل ہے جسے تین روزہ سرحدی تجارتی کمیٹی کی چھٹی نشست کے اختتام میں دونوں ممالک طے پاگئی.
پاکستان کے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں پاک ایران مشترکہ سرحدی تجارتی کمیٹی کے چھٹے اجلاس کا انعقاد کیا گیا جس میں ایرانی صوبے سیستان بلوچستان کی صنعت اور کان کنی اتھارٹی کے سربراہ 'نادر میر شکار' اور پاکستان کے کسٹم کلیکٹر 'اشرف علی' نے اپنے ملکوں کے وفود کی سربراہی کی.
اس معاہدے کے تحت اسلامی جمہوریہ ایران اور پاکستان دو طرفہ تجارتی سہولیات اور زمینی، ریل اور فضائی نقل و حمل کے شعبوں میں تعاون کو فروغ دیں گے.
پاک ایران سرحدی تجارتی تعاون کے معاہدے کے تحت دونوں ممالک کے درمیان کسٹم تعاون میں درپیش مسائل کا خاتمہ، سرحدی مارکیٹوں کی سرگرمیوں میں ترقی، بینکنگ شعبے میں تعلقات کی توسیع، سرحدی علاقوں میں مشترکہ سرمایہ کاری اور کوئٹہ اور زاہدان میں خصوصی نمائش کا انعقاد کیا جائے گا.
کوئٹہ میں تعینات ایران کے قونصل جنرل محمد رفیعی نے ارنا نیوز ایجنسی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اس اجلاس کے موقع پر ایرانی وفد میں شامل ریلوے اور بینکاری شعبے کے حکام نے پاکستانی بلوچستان کے ریلوے سربراہ اور اسٹیٹ بینک کے نمائندے کے ساتھ بھی خصوصی ملاقاتیں کیں.
انہوں ںے مزید کہا کہ ایرانی وفد نے گورنر بلوچستان 'امان اللہ خان یاسین زئی' سے بھی ملاقات کی.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@