خیرسگالی معاہدے سے نکلنے کا امریکی خط موصول ہوگیا: ایران

تہران،15اکتوبر،ارنا۔ ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ ایران کو امریکہ کی طرف سے دونوں فریقین کے درمیان 1955میں طے پانے والے خیرسگالی معاہدے سے نکلنے کا خط موصول ہوا ہے۔

یہ بات ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان 'بہرام قاسمی' نے آج بروز پیر ایک پریس کانفرنس کے موقع پر ایک پوچھے گئے سوال کے جواب میں کہا جس میں ایران کے حق میں عالمی عدالت انصاف کے عبوری فیصلے سے متعلق امریکہ کے عملی اقدامات کے بارے میں پوچھا گیا تھا۔
قاسمی نے مزید کہا امریکہ کے اعلان کے باوجود ایران اور امریکہ کے درمیان خیرسگالی معاہدے کی علیحدگی پر عمل درآمد کے لئے کم سے کم ایک سال کی ضرورت ہے۔
انہوں نے ایران مخالف نئی امریکی پابندیوں کے رد عمل میں ایران کے عملی اقدامات سے متعلق سوال کے جواب میں کہا کہ اسی حوالے سے ہم یقینی طور پر ضروری اقدامات کریں گے، لیکن موجودہ صورتحال میں ہم اپنی منصوبہ بندی کو عوامی سطح پر اعلان نہیں کرتے ہیں۔
ایرانی ترجمان نے شام کی تعمیر نو میں ایران کی شراکت کے حوالے سے کہا کہ شام میں ایران کی نجی سیکٹر کی موجودگی دمشق کی درخواست کی بنا پر ہے۔
انہوں نے کہا کہ شام میں دہشتگردی کے خلاف جنگ میں ایران کا کردار بہت اہم ہے اور ہم شام کی تعمیر نو مہم میں بھی حصہ لیں گے۔
9467*
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@