خاشقجی کی گمشدگی نے دنیا کے ضمیر کو جگایا: البرادعی

تہران، 15 اکتوبر، ارنا - اقوام متحدہ کے جوہری ادارے (IAEA) کے سابق سربراہ 'محمد البرادعی' نے سعودی صحافی جمال خاشقجی کے لاپتہ ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس مسئلے نے عالمی برادری کے ضمیر کو جگایا ہے.

محمد البرادعی نے اپنے ٹوئٹر اکاونٹ میں لکھا ہے کہ جمال خاشقجی کی گمشدگی سے متعلق تحقیقات کے ممکنہ نتائج سے ہٹ کر اس مسئلے نے عالمی برادری کے ضمیر کو جگایا جو مدتوں سے سویا ہوا تھا.
انہوں نے مزید کہا کہ ایک ایسے انسان جس کے پاس قلم کے سوا کوئی اسلحہ نہیں، کے لاپتہ ہونے کی تحقیقات سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ انسانیت کو پامال کرنے والے بعض افراد کی کوششوں کے باوجود انسانیت کے اصول اب بھی زندہ ہے اور مستقبل کے لئے ہمارے لئے امید کی کرن ہے.
محمد البرادعی کا کہنا تھا کہ ایسی بیداری مستقبل میں ہماری راہ نجات بنے گی.
یاد رہے کہ جمال خاشقجی سعودی عرب کے شہری اور آل سعود کے نقاد ہیں.
بعض ذرائع کا کہنا ہے کہ جمال کو استنبول میں قائم سعودی قونصل خانے کی عمارت میں قتل کردیا گیا ہے.
امریکہ میں مقیم سعودی صحافی ترک شہر استنبول میں سعودی عرب کے قونصل خانے گئے تھے، انہیں اپنی منگیتر کے سفری دستاویزات بنوانے تھے. منگیتر قونصل خانے کے باہر گیارہ گھنٹے انتظار کرتی رہی لیکن جمال قونصل خانے سے بابر نہیں آئے.
274**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@