پاک ایران دوطرفہ تعلقات کے فروغ کیلئے پرعزم ہیں: پاکستان کے سابق وزیرداخلہ

اسلام آباد،9اکتوبر،ارنا۔ پاکستان کے سابق وزیر داخلہ نے خطے میں اسلامی جمہوریہ ایران کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے اسلام آباد، تہران کے ساتھ باہمی تعلقات کو فروغ دینے کیلئے پرعزم ہے۔

یہ بات پاکستان کے سابق وزیر داخلہ رحمان ملک نے ارنا کے نمائندے کے ساتھ گفتگو دیتے ہوئے کہی۔
انہوں نے خطے اور دنیائے اسلام مین پاکستان اور ایران کے اہم کردار پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہم پاکستان کی نئی حکومت سے ایران کے ساتھ باہمی تعلقات کو اور بڑھانے کا مطالبہ کرتے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان کی حکومت ایران کے خلاف امریکی پابندیوں کی نئی تجدید سے مخالف ہے اور اس مشکل صورتحال میں ایران کے ساتھ اقتصادی اور تجارتی تعلقات کو مزید وسعت دینے کا خواہان ہے۔
پاکستان کے سابق وزیر داخلہ نے کہا کہ ہیمں ایران اور بھارت سے دو پڑوسی ممالک کے طور پر تجارتی تعلقات کی توسیع پرغور کیا جانا چاہئے.
رحمان ملک نے ایران اور پاکستان کی سابقہ حکومتوں کے درمیان متعدد معاہدوں پر دستخط کیے جانے کا حوالہ دیتے ہوئے مذکورہ معاہدوں کے نفاذ پر زوردیا۔
پاکستان سینٹ کے رکن نے کہا کہ امریکہ، ایران کے خلاف پابندیوں عائد کرنے کے سلسلے میں دوسرے ممالک پر دباؤ نہیں ڈال سکتا ہے کیونکہ صرف اقوام متحدہ کو دوسرے ملکوں کی کارگردگی پر فیصلہ کرنے کی اجازت ہے.
انہوں نے ایران کے جنوبی صوبے خوزستان کے شہر اہواز پر دہشت گردانہ حملے کی مذمت کرتے ہوئے اس حملے کو دشمنوں کی سازش قرار دے دیا۔
رحمان ملک نے اس طرح کے دہشت گردانہ حملوں کے مقابلہ کرنے کے لئے عالمی برداری سے ایران کو حمایت کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر اسلامی ممالک اس طرح کے دہشت گردانہ حملوں کے خلاف متحد نہ ہوجائیں تو مستقبل میں اسی طرح کے اقدامات دوسرے ممالک میں وقوع پذیر ہوگا۔


9467*
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@