سی ایف ٹی معاہدے میں ایران کی شمولیت کے بل کا جائزہ لیا جائے گا

تہران، 7 اکتوبر، ارنا - دہشتگردی کے لئے انسداد مالی معاونت کے عالمی معاہدے (CFT) میں اسلامی جمہوریہ ایران کی شمولیت کے بل کا آج بروز اتوار ایرانی پارلیمنٹ کی نشست میں جائزہ لیا جائے گا.

یہ نشست ایرانی پارلیمنٹ کی قومی سلامتی اور خارجہ پالیسی کمیشن کی زیرصدارت ہے جس میں ایرانی مرکزی بینک کے سربراہ، وزیر خارجہ اور کچھ اعلی سطحی حکام موجود ہوں گے.

کچھ حکام ملک کے اندر سی ایف ٹی معاہدے میں ایران کی شمولیت کے بل کے ساتھ مخالف ہیں۔

ایرانی حکومت پارلیمنٹ میں عالمی انسداد منی لانڈرنگ گروپ (FATF) میں اپنی پوزیشن کو بہتر بنانے کے لئے منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کے لئے مالی معاونت کے انسداد سے متعلق قوانین کے اصلاح کے لیے کوشش کر رہی ہے.

فنانشل ایکشن ٹاسک فورس آن منی لانڈرنگ ایک عالمی ادارہ ہے جو جی-سیون ممالک (امریکا، برطانیہ کینیڈا،فرانس، اٹلی، جرمنی اور جاپان) کے ایما پر بنایا گیا ہے، اس ادارے کا مقصد ان ممالک پر نظر رکھنا اور اقتصادی پابندیاں عائد کرنا ہے جو دہشت گردی کے خلاف عالمی کوششوں میں تعاون نہیں کرتے اور عالمی امن کے لیے خطرہ قرار دیے گئے دہشت گردوں کے ساتھ مالی تعاون کرتے ہیں.

**9410

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے.IrnaUrdu@