برطانیہ کا امریکہ کیجانب سے عالمی عدالت انصاف کے فیصلے پر عملدرآمد کا جائزہ

لندن، 6 اکتوبر، ارنا – برطانوی ایوان تجارت کے سربراہ نے ایران کے حق میں عالمی عدالت انصاف کے حالیہ فیصلے کو بڑی کامیابی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ لندن ایران مخالف امریکی پابندیوں کی فہرست سے ضروری سامان مستثنی قائل کرنا چاہتا ہے اور اس مسئلے کا جائزہ لے گا.

یہ بات 'نورمن لامونٹ' نے ارنا نیوز ایجنسی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئے کہی.
انہوں نے عالمی عدالت انصاف کے حالیہ فیصلے کو برطانیہ کی حوصلہ افزائی قرار دیتے ہوئے کہا کہ اگرچہ امریکی حکومت نے کوئی رکاوٹ کے بغیر ضروری سامان کی برآمدات پر وعدہ کیا مگر اس اصل کے مطابق عمل کرنا نہیں دیکھا جاتا ہے.
لامونٹ نے کہا کہ ہم برطانوی وزرا کے ساتھ کوئی رکاوٹ کے بغیر ضروری سامان کی برآمدات کے لئے امریکہ کی جانب سے اپنے وعدوں پر عملدرآمد کرنے کی کوشش کریں گے.
انہوں نے برطانیہ کی جانب سے عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کی منظوری کے لئے امریکہ پر دباو ڈالنے کے حوالے سے کہا کہ ہمارا ملک انسانی بنیادوں پر ضروری سامان مستثنی قائل کرنے پر دلچسبی رکھ کر اس مسئلہ کا جائزہ لے گا.
تفصیلات کے مطابق، عالمی عدالت انصاف نے بدھ کے روز ایران کی جانب سے ایران اور امریکہ کے درمیان 1955 میں طے پانے والے معاشی اور قونصلر امور کے معاہدے میں امریکہ کی خلاف ورزی کی درخواست کے فیصلہ پر اتفاق کرتے ہوئے امریکہ کی جانب سے ایران مخالف ادویات، خوراک، انسانی بنیادوں پر امداد اور ہوائی پابندیوں کے خاتمے کے حق پر فیصلہ کیا.
9393**
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@