ایران اور پاکستان کا تجارتی تعاون بڑھانے پر اتفاق

اسلام آباد، 4 اکتوبر، ارنا - پاکستان میں تعینات اسلامی جمہوریہ ایران کے سفیر نے کہا ہے کہ پاکستان کے ساتھ تجارتی تعلقات کو مزید بڑھانے پر اتفاق کیا۔

یہ بات 'مہدی ہنردوست' نے پاکستانی صوبے پاکستان کے وزیر اعلی 'جام میر کمال خان' اور اس صوبے کے علمائے کرام کے ساتھ ایک ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

اس موقع میں فریقین نے پارلیمانی وفود کے تبادلے، تعلیمی، ثقافتی و روایتی تعلقات اور تجارت کو تعاون کو مضبوط بنانے پر زور دیا۔

ایرانی سفیر نے پاکستان کے ساتھ باہمی تعلقات بڑہانے کے لیے ایران کے پختہ عزم کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ ایران امن گیس پائپ لائن منصوبے کو مکمل کرنے کا خواہاں ہے۔

ہنردوست نے کہا کہ دونوں ممالک دو طرفہ تعلقات کو نقصان پہنچانے کے لیے سازشوں کے ساتھ مقابلہ کر سکتے ہیں۔

انہوں نے پاکستانی صوبے بلوچستان اور ایرانی صوبے سیستان و بلوچستان کے درمیان بینکی تعلقات کو مزید فروغ دیتے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ روان مہینے میں دونوں ممالک کے تجارتی تعلقات کے جائزہ لینے کے مقصد سے ایران اور پاکستان کی مشترکہ سرحدی تجارتی کمیٹی کی نشست منعقد کی جائے گی۔

ہنردوست نے کہا کہ ایران اور پاکستان کی تجارت کا حجم ایک ارب اور 300 ملین ڈالر تک پہنچ گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم ایران میں مختلف صلاحیتوں کے باوجود پاکستان کے ساتھ باہمی تعلقات کو مزید وسعت دینا چاہتے ہیں۔

اس موقع میں جام کمال خان نے پاکستان کے ساتھ تجارتی تعلقات کی ترقی کے لیے ایرانی کوششوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ صوبے بلوچستان قدرتی ذخائر سے مالامال ہے تو ہم مشترکہ تعاون کے ساتھ دنیا میں اپنے اقتصادی اثر و رسوخ کو بڑے پیمانے پر وسعت دے سکتے ہیں۔

9410٭٭

ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@