عالمی عدالت انصاف کا فیصلہ پابندیوں کے عادی امریکی حکومت کی ایک اور شکست ہے: ایرانی وزیر خارجہ

تہران،3اکتوبر،ارنا۔ اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ نے عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کو امریکی حکومت کی ایک اورشکست اور قانون کی فتح قرار دیتے ہوئے کہا کہ عالمی برادری کو امریکہ کے ایک طرفہ تباہ کن فیصلوں کے خلاف مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔

یہ بات اسلامی جمہوریہ کے وزیر خارجہ 'محمد جواد ظریف' نے اپنی ذاتی ٹوئٹر اکاوںٹ میں ایک جاری کردہ پیغام میں کہی۔
انہوں نے کہا کہ عالمی عدالت انصاف کے فیصلے کے مطابق امریکہ نے ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی کے بعد ایران کے خلاف پھر دوبارہ پابندیان عائد کرنے کے ذریعے اپنے کیے گئے وعدوں کی کھلی خلاف ورزی کی ہے اور اسے ان وعدوں کو نبھانے کی ضرورت ہے۔
ظریف نے کہا کہ عالمی عدالت انصاف کا فیصلہ پابندیوں کے عادی امریکی حکومت کی ایک اور شکست ہے۔
انہوں نے کہا کہ عالمی برادری کو امریکہ کے ایک طرفہ تباہ کن اقدامات کے خلاف مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے۔
تفصیلات کے مطابق عالمی عدالت انصاف نے آج بروز بدھ ایران کی جانب سے ایران اور امریکہ کے درمیان 1955 میں طے پانے والے معاشی اور قونصلر امور کے معاہدے میں امریکہ کی خلاف ورزی کی درخواست کے فیصلہ پر اتفاق کرتے ہوئے امریکہ کی جانب سے ایران مخالف دوائیں، خوراک، انسانی بنیادوں پر امداد اور ہوائی پابندیوں کے خاتمے کے حق پر فیصلہ کیا.

9467*
ہمیں اس ٹوئٹر لینک پر فالو کیجئے. IrnaUrdu@